دہشتگرد کہاں سے آئے تمام معلومات موجود ہیں ، وزیراعظم عمران خان

دہشتگرد کہاں سے آئے تمام معلومات موجود ہیں ، وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد :وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ دہشتگرد کہاں سے آئے تمام معلومات موجود ہیں، دہشتگردوں  کا پوری طاقت کے ساتھ پیچھا کر رہے ہیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر وزیراعظم نے لکھا کہ پشاور میں بزدلانہ دہشت گردانہ حملے کے تناظر میں ذاتی طور پر آپریشنز کی نگرانی اور کاؤنٹر ٹیرر ازم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی)اور ایجنسیوں کے ساتھ رابطہ کاری کر رہا ہوں۔ اب ہمارے پاس تمام معلومات موجود ہیں دہشت گرد کہاں سے آئے، ان کا پوری طاقت کے ساتھ پیچھا کر رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ میری تعزیت پشاور حملے میں شہید ہونے والوں کے اہل خانہ کے ساتھ ہے اور زخمیوں کی صحت یابی کے لیے دعاگو ہیں۔عمران خان نے کہا کہ میں نے وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان کو ہدایت کی ہے کہ وہ ذاتی طور پر اہل خانہ سے ملاقات کریں اور ان کی ضروریات کا خیال رکھیں۔

واضح رہے  پشاور کے علاقے قصہ خوانی بازار کی مسجد میں فائرنگ اور خود کش حملے سے شہید ہونے والے افراد کی تعداد 56 ہوگئی ہے۔ 200 کے قریب افراد زخمی ہیں جن میں بعض کی حالت انتہائی تشویشناک ہے۔ 

نیو نیوز کے مطابق پشاور کی مسجد میں ہونے والے خود کش دھماکے سے شہید ہونے والے شہریوں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے ۔ اور تعداد 56 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 194 افراد زخمی ہیں۔ 

ترجمان لیڈری ریڈنگ ہسپتال کا کہنا ہے کہ متعدد زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے جس کے باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔ 

مصنف کے بارے میں