کیمبرج یونیورسٹی میں سیکڑوں لڑکیاں جنسی زیادتی اور حملے کا شکار ہوئیں: سروے

لندن: برطانیہ کی مشہور کیمبرج یونیورسٹی جس میں داخلہ لینا اور پڑھنا دنیا بھر کے تمام طلبا و طالبات کا خواب ہوتا ہے لیکن ایک تازہ سروے نے دنیا بھر کے تمام لوگوں کو حیرت زدہ کر دیا کہ اس یونیورسٹی میں پڑھنے والی سیکڑوں لڑکیاں جنسی زیادتی اور حملے کا شکار ہوئیں ہیں۔ یہ سروے نیوز پیپر ورسٹی اور کیمبرج یونیورسٹی سٹوڈینٹس یونین نے ایک ساتھ کیا۔

ڈی میلی کی ایک رپورٹ کے مطابق جنسی تشدد کے حوالے سے اس سروے میں 2126 کے قریب لڑکیوں نے اس سروے میں اپنا ردعمل دیا۔ سروے کے مطابق اس مشہور یونیورسٹی میں سیکڑوں طالبات کو حراساں اور جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا ہے لیکن ان میں سے کسی ایک لڑکی نے بھی اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے کو رپورٹ کروانے کی کوشش نہیں کی۔

ایک طلبا نے سروے میں انکشاف کیا کہ اس طرح کے واقعات زیادہ تر یونیورسٹی کے تاریخی کالجز کی حدود میں پیش آتے ہیں جہاں پر طالبات کی اکثریت پڑھائی کی غرض سے جاتی ہے۔

اس آن لائن سروے میں 8 اعشاریہ 4 فیصد طالبات نے کہا کہ انہیں جنسی طور پر ہراساں کیا گیا ہے جبکہ 88 فیصد طالبات نے اپنے ساتھ جنسی زیادتی اور ہراساں کرنے کے واقعات کو رپورٹ نہیں کروایا۔ ایک متاثرہ لڑکی نے کہا کہ اس نے حملہ آور کے بارے میں اس لئے رپورٹ نہیں کیا کیونکہ اس کے کوئی خاطر خواہ نتائج سامنے نہیں آئیں گے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں