موٹروے پر180 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گاڑی چلانے والی ”سپر سلمیٰ“ کو سزا مل گئی

موٹروے پر180 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے گاڑی چلانے والی ”سپر سلمیٰ“ کو سزا مل گئی
سورس: فوٹو: بشکریہ انسٹاگرام

اسلام آباد: نیشنل ہائی وے اینڈ موٹروے پولیس نے ’ریس‘ لگانے اور خطرناک ڈرائیونگ کرنے والی جیپ ریسنگ ڈرائیور سلمیٰ مروت عرف ’سپر سلمیٰ‘ کو 11 ہزار 600 روپے جرمانے کی سزا سنا دی ہے۔

نیشنل ہائی وے اینڈ موٹروے پولیس نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں بتایا کہ ’سلمیٰ مروت نے اپنا جرم تسلیم کر لیا ہے جس پر انہیں 11 ہزار 600 روپے جرمانے کی سزا سنائی گئی ہے۔ انہیں ریس لگانے اور خطرناک ڈرائیونگ کرنے سمیت 11 الزامات کی بنیاد پر جرمانہ کیا گیا ، ہم امید کرتے ہیں کہ دیگر لوگ اس سے سبق سیکھیں گے۔‘ 

خیبرپختونخواہ کے ضلع لکی مروت سے تعلق رکھنے والی سلمیٰ خان نے امپورٹڈ گاڑی کو انتہائی تیز رفتاری کیساتھ چلاتے ہوئے ویڈیو ریکارڈ کی اور اسے انسٹاگرام پر پوسٹ کیا تھا جسے بعد ازاں ڈیلیٹ کر دیا۔ 

نیشنل ہائی وے اینڈ موٹروے پولیس کی نظر سے یہ ویڈیو گزری تو انہوں نے 2 اکتوبر کو اسے ٹوئٹر پر شیئر کرتے ہوئے عوام سے مذکورہ خاتون کو ڈھونڈنے میں مدد کی اپیل کی جس پر سینکڑوں صارفین نے ان کی نشاندہی کر دی۔

 آج نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس کی جانب سے سلمیٰ مروت تک پہنچنے، ان کے جرم کو تسلیم کرنے اور انہیں جرمانہ عائد کرنے سے متعلق ٹویٹ کی ہے جس پر صارفین کی جانب سے ملے جلے تاثرات کا اظہار کیا جا رہا ہے۔