پیپسی کا نیا اشتہار سوشل میڈیا پر متنازع بن گیا،جس پر لوگوں کی کڑی تنقید

پیپسی کا نیا اشتہار سوشل میڈیا پر متنازع بن گیا

لاہور: مقبول مشروب ساز کمپنی پیپسی کا نیا اشتہار سوشل میڈیا پر متنازع بن گیا اور لوگوں کی جانب سے اس پر بہت زیادہ تنقید کی جارہی ہے۔منگل کی شب پیپسی نے اپنے نئے اشتہار کو ریلیز کیا تھا جس میں معروف ماڈل کینڈل جینر کو بھی شامل کیا گیا تھا۔


اس اشتہار میں یہ ماڈل ایک فوٹو شوٹ کررہی ہوتی ہیں جب اسے مظاہرین کا ایک گروپ نظر آتا ہے، وہ اس میں شمولیت کا فیصلہ کرتی ہے اور آخر میں پولیس افسر کو ایک پیپسی کی پیشکش کرتی ہے جو قبول کرکے مسکرانے لگتا ہے۔اس اشتہار پرامریکا میں سیاہ فاموں کے حقوق کے لیے چلنے والی مہم اور سماجی انصاف کو سافٹ ڈرنکس فروخت کرنے کے لیے استعمال کرنے کا الزام عائد کیا جارہا ہے۔

یہاں تک کہ اشتہار میں ماڈل کی تصویر بھی ایک حقیقی مظاہرے میں شریک خاتون سے ملتی جلتی ہے جسے ٹوئٹر پر شیئر کیا گیا۔یہ پیپسی کی 'مومنٹس' نامی مہم کے تحت بننے والا اشتہار تھا اور کمپنی کے بیان میں بتایا گیا کہ یہ درحقیقت مختصر فلم ہے جس میں ان لمحات کا ذکر ہے جب ہم نے آگے بڑھنے کا، اقدام کرنے کا، اپنے خواب کے حصول کا فیصلہ کرنا ہوتا ہے اور کوئی چیز ہمیں روک نہیں پاتی۔