کراچی میں عام انتخابات 2018 کے لیے 32 ہزارسے زائد اہلکار تعینات ہوں گے

12:39 AM, 5 Jul, 2018

کراچی: شہر میں عام انتخابات کے سیکیورٹی پلان کو حتمی شکل دے دی گئی ہے اور شہر میں الیکشن کے روز 32 ہزار 849 اہلکار تعینات ہوں گے۔

عام انتخابات کے لیے کراچی کے 565 پولنگ بلڈنگز انتہائی حساس، 1430 حساس قرار جب کہ 1181 پولنگ اسٹیشنز انتہائی حساس اور 2670 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔

سیکیورٹی پلان کے مطابق 32 ہزار 849 اہلکار الیکشن کے روز تعینات ہوں گے جب کہ 10 ہزار قومی رضاکار یا سیکیورٹی گارڈز کی خدمات لی جاسکتی ہیں۔

سیکیورٹی پلان میں ضلع شرقی میں 112 پولنگ بلڈنگز اور 254پولنگ اسٹیشنز انتہائی حساس قرار جب کہ 117 پولنگ بلڈنگز اور 220 پولنگ اسٹیشنز حساس قرار دیے گئے ہیں۔

ضلع ملیر میں 18 پولنگ بلڈنگز اور 24 پولنگ اسٹیشنز انتہائی حساس قرار جب کہ 105 پولنگ بلڈنگز اور 138 پولنگ اسٹیشنز کو حساس قرار دیا گیا ہے۔

ضلع کورنگی میں 138 پولنگ بلڈنگز اور 262 پولنگ اسٹیشنز انتہائی حساس قرار جب کہ ضلع کورنگی کی 206 پولنگ بلڈنگز اور 363 پولنگ اسٹیشنز حساس قرار دیئے گئے۔

ضلع وسطی میں 63 پولنگ بلڈنگز اور 223 پولنگ سٹیشنز انتہائی حساس قرار جب کہ ضلع وسطی کی 278 پولنگ بلڈنگز اور 747 پولنگ اسٹیشنز کو حساس قرار دیا گیا۔

ضلع غربی میں 123 پولنگ بلڈنگز اور 215 پولنگ اسٹیشنز انتہائی حساس قرار جب کہ ضلع غربی کی 440 پولنگ بلڈنگز اور745 پولنگ اسٹیشنز حساس قرار دیئے گئے ہیں , ضلع جنوبی کی تمام پولنگ بلڈنگز اور پولنگ اسٹیشنز انتہائی حساس اور حساس قرار دیئے گئے ہیں۔

ضلع سٹی میں 84 پولنگ بلڈنگز اور 138 پولنگ سٹیشنز کو انتہائی حساس قرار جبکہ 236 پولنگ بلڈنگز اور 363 پولنگ اسٹیشنز کو حساس قرار دیا گیا ہے , سیکیورٹی پلان کے مطابق شہر میں 633 پولنگ بلڈنگز اور 991 پولنگ بوتھ نارمل قرار دیئے گئے ہیں۔

 

مزیدخبریں