توشہ خانہ ریفرنس میں نواز شریف کے وارنٹ گرفتاری جاری

توشہ خانہ ریفرنس میں نواز شریف کے وارنٹ گرفتاری جاری
عدالت نے ریفرنس کی نقول فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت 11 جون تک ملتوی کر دی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے۔اسلام آباد کی احتساب عدالت نمبر کے جج سید اصغر علی نے توشہ خانہ ریفرنس پر سماعت کی۔ دوران سماعت نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ نواز شریف کی رہائش گاہ جاتی امرا پر ان کی طلبی کے سمن کی تعمیل کی گئی تھی تاہم نواز شریف کی گھر پر تعینات گارڈ عبدالمجید نے سمن وصول کرنے سے انکار کیا۔


عدالت نے نواز شریف کی قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے جب کہ آصف زرداری کی صرف ایک دن کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کرلی۔

احتساب عدالت نے آئندہ سماعت پر نواز شریف، آصف زرداری، یوسف رضا گیلانی ، انورمجید اور عبد الغنی مجید آئندہ سماعت پر ہر صورت پیش ہونے کا حکم دے دیا۔ عدالت نے ریفرنس کی نقول فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے سماعت 11 جون تک ملتوی کردی۔

یوسف رضا گیلانی پر آصف زرداری اور نواز شریف کو غیر قانونی طور پر گاڑیاں الاٹ کرنے کا الزام ہے۔ اس ریفرنس میں اومنی گروپ کے سربراہ خواجہ انور مجید اور خواجہ عبدالغنی مجید کو بھی ملزم نامزد کیا گیا ہے۔

نیب ریفرنس کے مطابق آصف زرداری اور نواز شریف نے گاڑیوں کی صرف 15 فیصد قیمت ادا کر کے توشہ خانہ سے گاڑیاں حاصل کیں۔ یوسف رضا گیلانی نے اس سلسلے میں نواز شریف اور آصف زرداری کو سہولت فراہم کی اور تحائف کو قبول کرنے اور ضائع کرنے کے طریقہ کار کو غیر قانونی طور پر نرم کیا۔