لوڈشیڈنگ کا مکمل خاتمہ ممکن نہیں مگر کمی ضروری ہو گی: وزیر توانائی

لوڈشیڈنگ کا مکمل خاتمہ ممکن نہیں مگر کمی ضروری ہو گی: وزیر توانائی

لاہور: وفاقی وزیر توانائی خرم دستگیر نے کہا ہے کہ لوڈ شیڈنگ کا مکمل خاتمہ ممکن نہیں البتہ آئندہ دنوں میں لوڈ شیڈنگ میں واضح کمی ہو گی، غروب آفتاب کے وقت مارکیٹس بند کرنے کی تجویز پر حتمی فیصلہ وزیراعظم کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر توانائی خرم دستگیر نے سولر انرجی ایسوسی ایشن کی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں اب درآمدی پٹرول، کوئلہ اور ڈیزل سے بجلی بنانا ممکن نہیں جس کے باعث ہمیں سستی بجلی کے ذرائع ہائیڈل، سولر اور ونڈ پر انحصار کرنا ہو گا۔ 

ان کا کہنا تھا کہ ہمیں مستقبل میں سستی بجلی پیدا کرنا ہو گی کیونکہ بجلی، گیس اور پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کی وجہ سابق حکومت کا 56 سو ارب روپے کا ملک کو مقروض کرکے جانا ہے، وفاقی بجٹ میں سولر پر سیلز ٹیکس ختم کر دیا جائے گا۔ 

واضح رہے کہ ملک میں بجلی کی طلب میں اضافے کے باعث شارٹ فال 6 ہزار سے تجاوز کر گیا ہے جس کی وجہ سے مختلف علاقوں میں 14 گھنٹے تک کی اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ 

مصنف کے بارے میں