آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل، شہبازشریف کو گرفتار کر لیا گیا

 آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل، شہبازشریف کو گرفتار کر لیا گیا

لاہور: قومی احتساب بیورو (نیب) نے آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکینڈل میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو گرفتار کر لیا۔مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کو نیب نے آج طلب کیا تھا اور وہ بیان ریکارڈ کرانے نیب لاہور کے دفتر پہنچے جہاں انہیں حراست میں لے لیا گیا۔


نیب کی جانب سے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی باضابطہ گرفتاری کے لیے اسپیکر قومی اسمبلی سے بھی رابطہ کیا گیا ہے۔نیب کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق سابق وزیراعلیٰ پنجاب کو کل احتساب عدالت لاہور میں پیش کیا جائے گا۔

صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان اور مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے بھی شہباز شریف کو حراست میں لیے جانے کی تصدیق کی ہے۔

سابق وزیراعلیٰ پنجاب سے تفتیش کرنے والی نیب کی تین رکنی ٹیم میں پراسیکیوشن، انویسٹی گیشن اور انٹیلی جنس کے لوگ شامل ہیں جو واٹر فلٹر پلانٹ اور چار ارب کے گھپلے سے متعلق تفتیش کر رہے ہیں۔

نیب لاہور کے دفتر کے باہر سیکیورٹی سخت ہے جب کہ امن و امان برقرار رکھنے کے لیے رینجرز کی بھاری نفری بھی موجود ہے۔

شہباز شریف کی حراست کی خبر نشر ہونے کے بعد کچھ لوگ نیب کے دفتر کے باہر احتجاج کرنے پہنچے تاہم انہیں سیکیورٹی اہلکاروں نے واپس جانے کی ہدایت کر دی۔

خیال رہے صاف پانی کمپنی سکینڈل میں سابق سی ای او وسیم اجمل کو بھی گرفتار کیا گیا تھا جنہوں نے مہنگے ٹھیکے دینے کا ملبہ شہباز شریف پر ڈالا تھا۔

وسیم اجمل نے اپنے بیان میں کہا تھا سابق وزیراعلیٰ پنجاب کے کہنے پر لوکل کی بجائے انٹرنیشنل کمپنیوں کو ٹھیکے دیئے گئے اورجو ٹھیکے دیئے گئے ہیں وہ مہنگے دیئے گئے ہیں،انہوں نے کہا کہ 4 افسران اور 2 بورڈ ممبرز نے بھی مداخلت کی۔

یاد رہے کہ رواں برس 11 فروری کو سپریم کورٹ میں صاف پانی ازخود نوٹس کی سماعت کے دوران شہباز شریف عدالت میں پیش ہوئے تھے اور انہوں نے یقین دہانی کرائی تھی کہ تین ہفتوں میں صاف پانی کی فراہمی اور واٹر ٹریٹمنٹ کا منصوبہ پیش کر دیں گے۔

اس کے علاوہ نیب 56 کمپنیز کرپشن کیس میں کروڑوں روپے کی کرپشن پر پہلے ہی تحقیقات کر رہا ہے۔

نیب نے آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکیم کیس میں لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے سابق ڈائریکٹر جنرل احد چیمہ اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے قریبی ساتھی اور سابق پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد کو بھی گرفتار کر رکھا ہے۔