صدر مملکت نے سزائے موت پانے والے مجرموں کی رحم کی اپیلیں مسترد کر دیں

صدر مملکت نے سزائے موت پانے والے مجرموں کی رحم کی اپیلیں مسترد کر دیں

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے سفاکانہ جرائم کے الزامات ثابت ہونے پر سزائے موت پانے والے پانچ مجرموں کی رحم کی اپیلیں مسترد کر دی ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے محمد شعبان ولد محمد انور، محمد عمران ولد فقیر محمد، محمد افضل ولد محمد اصغر علی، محمد اکبر اور محمد اصغر ولد محمد اکرم کی رحم کی اپیلیں مسترد کی ہیں۔ مذکورہ مجرموں کو قتل کے جرم میں موت کی سزا سنائی گئی تھی۔ 

ٓذرائع کے مطابق محمد شعبان کو تین سالہ بچی سے زیادتی اور قتل کرنے کے جرم میں سزائے موت سنائی گئی تھی جبکہ محمد عمران ولد فقیر محمد نے گھریلو جھگڑے کے بعد اپنی بیوی اور دو بیٹیوں کو ٹوکے سے قتل کیا تھا۔

محمد افضل ولد محمد اصغر علی نے والدین اور 6 بہن بھائیوں سمیت اپنے خاندان کے 8 افراد کو قتل کیا تھا جبکہ محمد اکبر اور محمد اصغر ولد محمد اکرم نے دو افراد کو معمولی جھگڑے کے بعد قتل کر دیا تھا۔ صدر مملکت نے آئین کے آرٹیکل 45 کے تحت ان اپیلوں کو مسترد کیا ہے۔ 

واضح رہے کہ آئین کے تحت صدر مملکت کسی بھی عدالت، ٹریبونل یا دیگر اتھارٹی کی طرف سے دی گئی سزاو¿ں کو معاف، معطل یا کم کرنے کا اختیار رکھتے ہیں۔ 

مصنف کے بارے میں