وفاقی کابینہ کا بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ، ٹاسک فورس قائم

وفاقی کابینہ کا بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ، ٹاسک فورس قائم

اس حوالے سے ٹاسک فورس کے قیام کے لیے وزیراعظم ہاؤس میں ایک یونٹ قائم کر دیا گیا ہے۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: وفاقی کابینہ نے بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ کر لیا جس کے لیے ٹاسک فورس قائم کر دی گئی۔ وزیراعظم عمران خان کی زیرِ صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیراعظم ہاؤس میں ہوا جس کے دوران 8 نکاتی ایجنڈا زیرِ غور آیا۔

 

اجلاس کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے بتایا کہ وفاقی کابینہ نے بیرون ملک سے رقوم واپس لانے کا فیصلہ کر لیا ہے اور اس حوالے سے ٹاسک فورس کے قیام کے لیے وزیراعظم ہاؤس میں ایک یونٹ قائم کر دیا گیا ہے۔

 

فواد چوہدری نے بتایا کہ بیرون ملک ایک ارب روپے کی غیر قانونی جائیداد کی نشاندہی کرنے والے کو بیس کروڑ روپے دیئے جائیں گے۔

 

اس موقع پر مشیر بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا کہ بیرون ملک موجود رقم کی معلومات فراہم کرنے والے کا نام صیغہ راز میں رکھا جائے گا۔

 

وزیر اطلاعات نے بتایا کہ تعلیم کے شعبے میں بہتری کے لیے بھی وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی سربراہی میں ایک ٹاسک فورس قائم کی گئی ہے۔

 

انہوں نے بتایا کہ مدارس سمیت تمام اسکولوں میں یکساں نصاب رائج کیا جائے گا اور نجی اسکولوں کی فیسوں کو بھی مناسب سطح پر لایا جائے گا۔