برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادیں رکھنے والے پاکستانیوں کیخلاف کارروائی کا آغاز ہو گیا

برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادیں رکھنے والے پاکستانیوں کیخلاف کارروائی کا آغاز ہو گیا

برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادیں رکھنے والے پاکستانیوں کیخلاف محکمانہ کارروائی شروع کر دی ہے، رخسانہ یاسمین۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: ایف بی آر نے برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادیں رکھنے والے پاکستانیوں کے خلاف محکمانہ کارروائی کا آغاز کر دیا۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کی مدت پوری ہونے پر ہفتے کے روز برطانیہ اور دبئی میں جائیدادیں رکھنے والے پاکستانی شہریوں کو نوٹس جاری کیے تھے۔

 

چیئر پرسن ایف بی آر رخسانہ یاسمین کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادیں رکھنے والے پاکستانیوں کے خلاف محکمانہ کارروائی شروع کر دی ہے جو ٹیکس ایمنسٹی سے فائدہ نہ اٹھانے والے پاکستانیوں کے خلاف کی جا رہی ہے۔

 

مزید پڑھیں: تحریک انصاف کی جیت میں ایک موبائل فون ایپ کا اہم کردار رہا، رائٹرز

چیئرپرسن ایف بی آر کا کہنا تھا کہ برطانیہ میں غیر منقولہ جائیدادوں کے مالک پاکستانیوں کی معلومات برطانوی ٹیکس اتھارٹی سے لی گئی ہیں۔

 

ذرائع کے مطابق ایف بی آر کی جانب سے برطانیہ میں جائیداد رکھنے والے ایسے پاکستانی شہریوں کو نوٹس جاری کیے گئے ہیں جنہوں نے ایمنسٹی اسکیم میں ٹیکس ظاہر نہیں کیا۔ نوٹس میں پوچھا گیا ہے کہ جائیداد کب اور کس سے خریدی گئی؟ اور جس پیسے سے جائیداد خریدی گئی وہ پیسہ کہاں سے آیا؟ اس پیسے پر ٹیکس کا اطلاق تھا یا نہیں؟۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ نوٹس ایسے افراد کو جاری کیے گئے جو بیرون ملک جائیداد سے کرائے کی شکل میں انکم وصول کر رہے ہیں۔ ذرائع کا بتانا ہےکہ ایسے افراد سے باقاعدہ تحقیقات کی جائیں گی۔

 

یہ خبر بھی پڑھیں: جس خاتون کا ذکر کیا گیا وہ میری منکوحہ ،ستمبر میں رخصتی ہے:عامر لیاقت حسین


واضح رہے کہ مسلم لیگ (ن) کے گزشتہ دور حکومت میں ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کا اعلان کیا گیا تھا جس کے تحت بیرون ملک اثاثے رکھنے والوں کو 2 فیصد جرمانہ ادا کر کے اسکیم سے فائدہ اٹھانے کا موقع دیا گیا تھا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں