خیبرپختونخواہ میں کورونا فنڈ میں 3 ارب روپے سے زائد کی مبینہ بے ضابطگیوں کا انکشاف

خیبرپختونخواہ میں کورونا فنڈ میں 3 ارب روپے سے زائد کی مبینہ بے ضابطگیوں کا انکشاف
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

پشاور: صوبہ خیبر پختونخوا میں کورونا فنڈ میں 3 ارب روپے سے زائد کی مبینہ بے ضابطگیوں کا انکشاف ہوا ہے۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق خیبر پختونخوا کورونا فنڈ میں 3 ارب کی بے ضابطگیوں کا انکشاف صدر مملکت کو پیش کی جانے والی رپورٹ میں ہوا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کے پی حکومت نے کورونا وائرس فنڈ کی مد میں 18ارب روپے سے زائد لئے جن میں سے 80 کروڑ روپے کی فرضی دوائیاں اور سازوسامان خریدا جبکہ مہنگی کورونا دوائیاں خریدنے پر صوبائی حکومت کو 10 کروڑ کا نقصان ہوا۔

رپورٹ کے مطابق 14کروڑ روپے کے قرنطینہ سینٹرز بنانے کے فنڈ میں بے ضابطگیاں ہوئیں جبکہ ماسک، کورونا سازوسامان اوردوائیاں خریدنے میں30 کروڑ روپے کی بے ضابطگیاں پائی گئیں، اس کے علاوہ وائرس سے مرنے والوں کیلئے مختص فنڈز میں بھی کروڑوں روپے کی بے ضابطگیاں ہوئیں۔