نیوزی لینڈ کے 8 اہم کرکٹرز کا پاکستان نہ آنے کا خدشہ

نیوزی لینڈ کے 8 اہم کرکٹرز کا پاکستان نہ آنے کا خدشہ
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

لاہور: نیوزی لینڈ کے دورہ پاکستان کے دوران 8اہم کیوی کرکٹرز کے پاکستان نہ آنے کا خدشہ سامنے آیا ہے کیونکہ ان تاریخوں میں یہ کرکٹرز انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) میں ایکشن میں دکھائی دیں گے۔ 

تفصیلات کے مطابق عالمگیر موذی باءکورونا وائرس کی وجہ سے ملتوی شدہ بھارتی لیگ کا دوسرا مرحلہ 19ستمبر سے متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں شروع ہو گا جبکہ دوسری جانب پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے نیوزی لینڈ کے خلاف ہوم سیریز کے شیڈول کا اعلان کردیا ہے جس کے میچز 17 ستمبر سے 3 اکتوبر تک جاری رہیں گے۔

ذرائع کے مطابق کیوی کرکٹرز میں سے کین ولیمسن حیدر آباد سن رائزرز کے کپتان ہیں،ٹرینٹ بولٹ اور ایڈم ملنے دفاعی چیمپئن ممبئی انڈینز جبکہ کائل جیمی سن رائل چیلنجرز بنگلور کی نمائندگی کرتے ہیں، مچل سینٹنر چنائی سپر کنگز، لوکی فرگوسن اور ٹم سیفرٹ کلکتہ نائٹ رائیڈرز جبکہ فن ایلن رائل چیلنجرز بنگلور کی جانب سے کھیلتے ہیں۔

واضح رہے کہ چند روز قبل بھارتی میڈیا میں سامنے آنے والی رپورٹس میں نیوزی لینڈ کرکٹ کے چیف ایگزیکٹیو ڈیوڈ وائٹ نے کہا تھا کہ پاکستان سے سیریز شیڈول ہونے کے باوجود ولیم سن، بولٹ اور لوکی فرگوسن سمیت سٹار پلیئرز کو آئی پی ایل میچز میں شرکت کی اجازت دیدی جائے گی جس پر منتظمین نے اطمینان کا اظہار کیا تھا۔

ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق کیوی بورڈ کی جانب سے 8کرکٹرز کو بھارتی لیگ میں حصہ لینے کی اجازت ملنے کا امکان ہے اور ایسا ہونے کی صورت میں کیوی ٹیموں کی کمان ٹم ساؤتھی اور ٹام لاتھم کو سنبھالنا ہو گی۔

دوسری جانب پاکستان سے سیریز کے شیڈول کا باقاعدہ اعلان ہونے کی وجہ سے آئی پی ایل منتظمین میں ایک بار پھر تشویش کی لہر پائی جانے لگی، بعض فرنچائزز کی جانب سے کیوی بورڈ کے ساتھ رابطے کے فقدان پر بھی بی سی سی آئی کو تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔