ترکی میں 14 یونیورسٹی اساتذہ کو جیل بھیج دیا گیا

ترکی میں 14 یونیورسٹی اساتذہ کو جیل بھیج دیا گیا

انقرہ: ترک یونیورسٹی کے چودہ اساتذہ کو فرد جرم عا‏ئد کرنے کے بعد جیل بھیج دیا گیا ہے۔


 سرکاری ٹی وی کے مطابق، فتح اللہ گولن کی تنظیم سے تعلق رکھنے کے الزام میں ییلدیز ٹیکنکل یونیورسٹی کے تیس اساتذہ کو گرفتار کیا گیا تھا جن میں سے چودہ پرفرد جرم عائد کردی گئی ہے۔

ایک اور اطلاع کے مطابق ترک پولیس نے مختلف صوبوں میں چھاپے مار کر فتح اللہ گولن کی تنظیم سے تعلق رکھنے والے آٹھ افراد کو گرفتار کیا ہے۔ترکی کی ایک عدالت نے شمدینلی شہر کے میئر کو بھی فرد جرم سنانے کے بعد جیل بھیج دیا ہے۔ ان پر کردوں کی حامی جماعت پی کے کے کی حمایت کا الزام ہے۔

انہیں گزشتہ دنوں حکاری صوبے سے گرفتار کیا گیا تھا۔ ترکی میں پندرہ جولائی کو ہونے والی ناکام فوجی بغاوت کے بعد سے فوج، عدلیہ ، پولیس، محکمہ تعلیم اور میڈیا سے تعلق رکھنے والے ہزاروں ملازمین کو برطرف، معطل اور گرفتار کیا جاچکا ہے۔

ترک حکومت نے ملک میں پندرہ جولائی کو ہونے والی ناکام فوجی بغاوت کا الزام امریکی ریاست پینسلوانیہ میں مقیم خدمت تحریک کے رہنما فتح اللہ گولن پرعائد کیا ہے جسے انہوں نے سختی کے ساتھ مسترد کردیا ہے۔

نیوویب ڈیسک< News Source