مصر کے سابق وزیر داخلہ عدالتی فیصلے کی حکم عدولی پر گرفتار

قاہرہ: مصر کے سابق وزیر داخلہ حبیب العادلی کو بدعنوانی کے ایک مقدمے میں عدالتی فیصلے کی حکم عدولی پر گرفتار کر لیا گیا۔ عرب ذرائع ابلاغ کے مطابق حبیب العادلی معزول صدر حسنی مبارک کے دور حکومت میں وزیر داخلہ رہے تھے۔

انھوں نے اپریل میں اپنے خلاف دائر مقدمے کی حتمی سماعت کے موقع پر عدالت میں پیش ہونا تھا۔ انھوں نے تب ایک مرتبہ خود کو حکام کے حوالے کر دیا تھا لیکن اس کے بعد وہ روپوش ہو گئے تھے اور پھر عدالت میں حاضر ہوئے اور نہ انھوں نے اپنے خلاف عدالت کے فیصلے پر عمل کیا ہے۔

واضح رہے کہ عدالت نے اپریل میں سنائے گئے اس حکم میں حبیب العادلی اور ان کی سابق وزارت کے دو عہدے داروں کو کرپشن کی رقم ایک ارب پچانوے کروڑ مصری پاؤنڈ واپس قومی خزانے میں جمع کرانے کا حکم دیا تھا اور اتنی ہی رقم کے برابر ان پر جرمانہ عائد کیا تھا۔

 

 

 

 نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں