نیب نے عبدالعلیم خان کو گرفتار کر لیا، عہدے سے استعفیٰ دے دیا

نیب نے عبدالعلیم خان کو گرفتار کر لیا، عہدے سے استعفیٰ دے دیا

لاہور: نیب لاہور نے پاکستان تحریک انصاف اور پنجاب کے سینئر وزیر عبدالعلیم خان کو گرفتار کر لیا ہے۔انہیں کل احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا اور 15 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جائے گی۔  ذرائع کے مطابق نیب لاہور نے عبدالعلیم خان کو آمدن سے زائد اثاثوں کی تفتیش کے لیے آج طلب کیا تھا جس کے لیے وہ نیب آفس پہنچے جہاں انہیں حراست میں لے لیا گیا۔


ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب نے علیم خان کو آف شور کمپنی اسکینڈل میں حراست میں لیا ہے۔نیب نے عبدالعلیم خان سے قریباً 18 کے قریب سوالات کئے۔ اس کے علاوہ انہوں نے لندن اور دبئی میں بھی جائیدادیں خریدی تھیں جن سے متعلق بھی سوالات کئے گئے تاہم وہ نیب کو مطمئن کرنے میں ناکام رہے۔

عبدالعلیم خان کو گرفتار کرنے سے پہلے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی اور دیگر ذمہ داران کو بھی باقاعدہ طور پر اعتماد میں لیا گیا۔

ادھر عبدالعلیم خان نے سینیر وزیر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔ عبدالعلیم خان کا کہنا ہے کہ مقدمے میں گرفتاری کے باعث سینئر وزیر کے عہدے سے مستعفی ہو رہا ہوں۔ اپنے خلاف کیس اور گرفتاری کا عدالت میں سامنا کروں گا اور عدالت سے امید ہے انصاف ملے گا۔