گلگت ' ہوٹل میں اعلیٰ شراب فروخت کرنے کے الزام میں چینی باشندہ گرفتار

گلگت میں ایک چینی باشندے کو شراب فروخت کرنے کے الزام میں پولیس نے گرفتار کرلیا،پولیس حکام نے چینی باشندے کے قبضے سے شراب کی 112 بوتلیں برآمد کر لیں۔تھانہ جٹیال کے پولیس اہلکار شاہد نے برطانوی نشریاتی ادارے کو بتایا کہ پولیس نے خفیہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے علاقے کے مقامی ہوٹل میں چینی باشندے ژانگ سے اعلیٰ کوالٹی کی شراب کی 112 بوتلیں، 150 تھیلے اور شراب کے 14 پیکٹ برآمد کر لیے ہیں۔پولیس کے مطابق پکڑی جانے والے شراب کی قیمیت لاکھوں میں ہے،جس کے بعد ژانگ کو گرفتار کرکے ان کے خلاف تھانہ جٹیال میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے جبکہ ہوٹل کو سیل کر دیا گیا ہے۔بتایا جا رہا ہے کہ گرفتار غیر ملکی چینی باشندے نے تفتیش کے دوران اعلیٰ معیار کی شراب تیار کرنے والے مشینوں کے موجودگی کے انکشافات بھی کیے ہیں۔پولیس حکام نے بتایا ہے کہ اس سے پہلے بھی گلگت کے مختلف علاقوں میں شراب کا کاروبار کرنے پر تین چینی باشندوں کو گرفتار کیا گیا تھا اور ان کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی گئی تھی۔

واضح رہے کہ گلگت میں منشیات کے خلاف بننے والی سپیشل فورس نے چند دن پہلے بھی ایک ملزم کو گرفتار کر کے اس کے قبضے سے پانچ سو لیٹر سے زائد شراب برآمد کی تھی، جبکہ شراب بنانے والی بھٹی کو بھی قبضے میں لے لیا تھا۔علاقے کے مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ مقامی طور پر تیار کی جانے والی شراب سے پچھلے سال ہلاکتوں کے واقعات بھی سامنے آئے تھے۔خیال رہے کہ گذشتہ روز بھی پشاور میں زہریلی شراب پینے سے مسیحی برادری کے پانچ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

مصنف کے بارے میں