لاک ڈاؤن کا مطلب معیشت کی تباہی ہے، وزیراعظم

لاک ڈاؤن کا مطلب معیشت کی تباہی ہے، وزیراعظم
پاکستان سمارٹ لاک ڈاون کے بانی ممالک میں شامل ہے، وزیراعظم۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ اشرافیہ لاک ڈاون چاہتی ہے کیونکہ مراعات یافتہ طبقے کے پاس بڑے گھر اور زیادہ وسائل موجود ہیں۔ لاک ڈاون کا مطلب معیشت کی تباہی ہے۔


وزیراعظم عمران خان نے کورونا وائرس سے متعلق عوام کے تاثرات پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے خیالات کا اظہار ٹویٹس میں کیا۔

ٹویٹر پر عمران خان نے لکھا کہ لاک ڈاون سے غریب آدمی اسی طرح متاثر ہوگا جیسے بھارت میں ہوا۔ کورونا کے پھیلاؤ کا واحد حل سمارٹ لاک ڈاون ہے۔ سمارٹ لاک ڈاون میں ایس او پیز کے ساتھ اقتصادی سرگرمیوں کی اجازت ہوتی ہے۔ پاکستان سمارٹ لاک ڈاون کے بانی ممالک میں شامل ہے۔

ٹویٹ کے دوران وزیراعظم عمران خان نے علماء، میڈیا، سول سوسائٹی اور ٹائیگر فورس سے عوامی آگاہی کی اپیل بھی کی۔

انہوں نے مزید لکھا کہ عوام کورونا وائرس کو سنجیدگی سے نہیں لے رہی، ڈاکٹر اور ہیلتھ پروفیشنل کورونا کے باعث شدید خطرات سے دوچار ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ہماری اشرافیہ لاک ڈاون چاہتی ہے کیونکہ ہمارے مراعات یافتہ طبقے کے پاس بڑے گھر اور زیادہ وسائل موجود ہیں۔ لاک ڈاون کا مطلب معیشت کی تباہی ہے۔ غریب ممالک میں لاک ڈاون سے غربت تیزی سے بڑھتی ہے۔

اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے ایک اور ٹویٹ کیا جس میں انہوں نے ایک نظم شیئر کی۔ شروع میں وزیراعظم نے بتایا کہ یہ نظم علامہ اقبالؒ کی ہے، تاہم بعد میں انہوں نے تصحیح کی یہ نظم علامہ اقبالؒ کی نہیں ہے۔

وزیر اعظم نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک نظم کا کچھ حصہ شیئر کیا اور اسے علامہ اقبال کی شاعری قرار دیا۔