ایران یمن کے حوثی باغیوں کو بیلسٹک میزائل فراہم کررہا ہے:عرب اتحاد

ایران یمن کے حوثی باغیوں کو بیلسٹک میزائل فراہم کررہا ہے:عرب اتحاد

تہران:یمن میں دستوری حکومت کا تختہ الٹنے والے باغیوں کو کچلنے اور آئینی حکومت کی رٹ بحال کرنے کے لیے سعودی عرب کی قیادت میں قائم عرب اتحاد نے الزام عاید کیا ہے کہ ایران یمن کےحوثی باغیوں کو بیلسٹک میزائل فراہم کررہا ہے۔


تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز الریاض میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے کہا کہ یمن کے حوثی باغیوں کی سعودی عرب کے خلاف خطرناک جارحیت اور بیلسٹک میزائل حملوں کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے۔ حوثی شدت پسند ایران کی معاونت سے سعودی عرب پر حملے کررہے ہیں۔

کرنل ترکی المالکی نے ایران کی طرف سے یمنی باغیوں کو اسلحہ اور میزائلوں کی فراہمی کی تصاویری ثبوت بھی دکھائے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران کے علاوہ لبنانی دہشت گرد ملیشیا حزب اللہ بھی حوثیوں کو اسلحہ، جنگی تربیت اور تکنیکی معاونت فراہم کرتی ہے۔انھوں نے کہا کہ ایران کی طرف سے یمن میں حوثی باغیوں کو زمین سے زمین پر مار کرنے والے بیلسٹک میزائل فراہم کئے ہیں۔ یہ سلسلہ جاری ہے۔ جن گاڑیوں سے بیلسٹک میزائل داغے جاتے ہیں وہ بھی ایران سے لائی گئی ہیں۔ نیز ایران یمنی باغیوں کو بغیر پائلٹ ڈرون طیارے بھی فراہم کررہا ہے۔

انہوں نے دو روز قبل سعودی عرب کے شہر الریاض پر بیلسٹک میزائل حملے کی سازش کی شدید مذمت کی اور کہا کہ اس حملے کے پیچھے ایران کا ہاتھ ہے۔ یمنی باغیوں میں اتنی جرات نہیں کہ وہ سعودی عرب پر اس طرح کے حملوں کی منصوبہ بندی کرسکیں۔