بھارتی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کےلئے بھارت کی نئی سازش 

بھارتی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کےلئے بھارت کی نئی سازش 

سرینگر:غیر قانونی طور پربھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کےلئے بھارت ایک نئی سازش کے تحت وادی کشمیر میں مہاجر پنڈتوں کے نام پر عارضی قیام گاہیں قائم کر رہا ہے۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بی جے پی کی زیرقیادت بھارتی حکومت نے وادی کشمیرمیں کشمیری پنڈتوں کو آباد کرنے کے نام پر خصوصی کالونیوں کا قیام شروع کردیا ہے۔

باوثوق ذرائع کے مطابق مودی حکومت خطے میں بھارتی ہندوو¿ں کو آباد کرنے کےلئے تیزی سے عارضی قیام گاہیں تعمیر کر رہی ہے اور اس پر عملدرآمد کی نگرانی خود آر ایس ایس کی حمایت یافتہ حکومت کر رہی ہے۔

اگرچہ بین الاقوامی قانون کے تحت بھارت اپنے زیر قبضہ جموںوکشمیرمیں آبادی کا تناسب تبدیل نہ کرنے کا پابند ہے لیکن وادی کشمیر کے تمام اضلاع میں ہندوؤں کےلئے راہداری کیمپوں کی تعمیر جاری ہے۔

عالمی برادری کو بھارت کے اس اقدام کو روکنا ہوگا کیوں کہ مقبوضہ علاقے میں آبادی کے تناسب میں تبدیلی کا مقصد مستقبل کی رائے شماری پر اثرانداز ہونا ہے جس کا وعدہ کشمیرکے حوالے سے اقوام متحدہ کی قراردادوں میں کیاگیا ہے۔