عمران طاہر نے پاکستانی قونصل خانے پر الزام عائد کر دیا

عمران طاہر نے پاکستانی قونصل خانے پر الزام عائد کر دیا

لاہور: پاکستان نژاد جنوبی افریقی سپنر عمران طاہر نے برمنگھم میں پاکستانی قونصلیٹ پر الزام عائد کیا ہے کہ انہیں ویزا کیلئے کئی گھنٹے انتظار کروایا گیا لیکن پاکستانی ہائی کمیشن نے ان الزامات کی تردید کی ہے۔


ذرائع ابلاغ کے مطابق ورلڈ الیون ٹیم کے ساتھ آنے والے عمران نے برطانیہ میں پاکستانی قونصل خانے پر خراب رویے کا الزام عائد کیا ہے۔عمران طاہر نے اپنے نئے ٹوئٹر اکاو¿نٹ پر پاکستانی ہائی کمیشن کے نارو سلوک کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وہ ویزے کے حصول کے لیے اہل خانہ کے ہمراہ پاکستانی ویزے کے حصول کے لیے برمنگھم میں پاکستانی قونصلیٹ گئے تھے لیکن ہائی کمیشن میں پانچ گھنٹے طویل انتظار کروانے کے بعد کہا گیا دفتری اوقات ختم ہوگئے ہیں اور قونصل خانے کو بند کیا جا رہا ہے۔

دوسری طرف پاکستانی ہائی کمیشن کا کہنا ہے کہ عمران طاہر کے پاس کاغذات پورے نہیں تھے جس کے باعث تاخیر ہوئی اور جنوبی افریقی اسپنر برطانیہ میں ہوتے ہوئے جنوبی افریقی پاسپورٹ سے اپلائی کررہے تھے اس لیے ویزا کے اجرا میں اضافی وقت لگا۔

ú