پاکستان میں باقاعدہ یہودی ایجنڈے کا آغاز ہو چکا ہے، مولانا فضل الرحمان

پاکستان میں باقاعدہ یہودی ایجنڈے کا آغاز ہو چکا ہے، مولانا فضل الرحمان

اس وقت کے وزیر اعظم، وزیر اعلیٰ اور اکثریت کی حکومت جعلی ہے، مولانا فضل الرحمان۔۔۔۔فائل فوٹو

پشاور: میڈیا سے بات کرتے ہوئے جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ عام انتخابات کے نتائج کو تمام سیاسی جماعتوں نے متفقہ طور پر مسترد کیا اور سب نے متفقہ طور پر موقف پیش کیا کہ انتخابات میں دھاندلی ہوئی ہے۔ اس وقت کے وزیر اعظم، وزیر اعلیٰ اور اکثریت کی حکومت جعلی ہے اب بھی کہتے ہیں چیف الیکشن کمشنر استعفیٰ دیں۔

 

مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف نے اقتصادی کونسل بنائی اور اس کونسل میں جان بوجھ کر یہودی ایجنٹ میاں عاطف کو رکھا جبکہ یہ بات میں 10 سال سے کہتا رہا ہوں اور آج پاکستان میں باقاعدہ یہودی ایجنڈے کا آغاز ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا حکومت ایسے عزائم سے پسپائی اختیار کرے اور عوام کو بیدار کرنے کی مہم چلائی جائے گی۔

 

سربراہ جے یو آئی نے کہا کہ مدارس میں کوئی طبقاتی فرق نہیں اور ہر تعلیمی بورڈ کا اپنا نصاب ہے۔ ہم سرکاری اور عسکری تعلیمی اداروں کی ضرورت کا بھی انکار نہیں کرتے اور نئی نسل کو جدید علوم سے آراستہ کرنے کا نظریہ رکھتے ہیں لیکن اگر کوئی بہانہ بنا کر دینی علوم کے مدارس پر شب خون مارنے کی کوشش کی گئی تو سخت مزاحمت کریں گے۔