ملک بھر میں اشیائے خورو نوش حکومتی قیمتوں سے مختلف

ملک بھر میں اشیائے خورو نوش حکومتی قیمتوں سے مختلف

اسلام آباد/کراچی:ملک میں اشیائے خوردو نوش دالوں،چاول،اورچینی کی گرتی ہوئی قیمتوں کے باوجود اوپن مارکیٹ میں چیزوں کی قیمتیں زیادہ ہیں۔مہنگائی کے جن کو قابو کر نے کے حکومتی دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔حکومتی نرخ ناموں میں اشیائے خور دونوش کی قیمتیں بازار کی قیمتوں سے بالکل مختلف،دالیں ہوں سبزیاں گوشت یا پھل ہر چیز کی قیمت حکومت کی طے کردی قیمت سے زیادہ ہے۔


محکمہ نظامت زراعت پنجاب کی حالیہ رپورٹ کی کچھ اشیا کا موازنہ کریں تو دال ماش 184 روپے فی کلو جبکہ اوپن مارکیٹ میں 250 روپے، 20 کلو آٹے کا تھیلا 655 روپے جبکہ عام مارکیٹ میں 745 روپے، عالمی مارکیٹ میں چینی کی قیمت49 روپے جبکہ پاکستان میں سیزن کے باوجود چینی 70 سے 72روپے فی کلو تک فروخت ہو رہی ہے۔دکانداروں نے سرکاری نرخنامہ رکھ دیے بالائے لیکن ان پر عمل نہیں کیا۔

عوام کا کہنا ہے کہ مارکیٹ میں زیادہ تر دوکانوں پر حکومتی ریٹ لسٹ آویزاں ہی نہیں ہے۔دوکاندار من مانی قیمت وصول کرتے ہیں، پرائس کنٹرول کمیٹی کہاں ہے؟ اور عام آدمی کو قیمتیں کم ہونے کا کیا فائدہ ہے۔

نیوویب ڈیسک< News Source