شہباز شریف کا نعرہ ہے میری بیماری میری مرضی ، شیخ رشید

 شہباز شریف کا نعرہ ہے میری بیماری میری مرضی ، شیخ رشید
عمران خان اسی مہینے آٹا اور چینی کا بحران پیدا کرنے والوں کو بے نقاب کریں گے، شیخ رشید۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

لاہور: وزیر ریلوے شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ شہباز شریف کا نعرہ ہے میری بیماری میری مرضی ہے۔ ریلوے ہیڈ کوارٹرز لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران شیخ رشید احمد نے کہا کہ حکومت میں کوئی تبدیلی نہیں آ رہی اور پہلے بھی کہتا رہا کہ (ق) لیگ ہمارے ساتھ ہو گی، عمران خان معیشت پر ایک ماہ میں اچھی خبر دیں گے اور چور مافیا کو سامنے لائیں گے۔ عمران خان اسی مہنے آٹا اور چینی کا بحران پیدا کرنے والوں کو بے نقاب کریں گے۔


وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری کے بیان کو سنجیدہ نہیں لیتا اور اس کے دودھ کے دانت نہیں ٹوٹے، قمر زمان کائرہ، مولا بخش چانڈیو اور اعتزاز احسن جیسے لیڈرز کے مقابلے میں بلاول خود سلیکٹڈ ہے، پیپلز پارٹی کی پنجاب میں دال نہیں گل سکتی یہ مردوں کا علاقہ ہے اور پیپلز پارٹی جتنی مرضی کوشش کر لے پنجاب میں بلاول کی کچھ نہیں چل سکتی۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ خواتین کے حقوق پر بلاول بھٹو زرداری صحیح رہنمائی کریں گے اور میرے لئے خواتین سنجیدہ معاملہ نہیں رہا، میری اپنی قومی اسمبلی میں ایک ٹکٹ ہے اور بھتیجا پی ٹی آئی سے رکن قومی اسمبلی ہے اگر 2 نشستیں ہوتیں تو بہت کچھ ہو جاتا۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ شہباز شریف میرے دوست ہیں، پتہ نہیں آج کل وہ کس دکان سے نئے ہیٹ اور کورٹ خرید رہے ہیں، شہباز شریف کا نعرہ میری بیماری میری مرضی ہے۔ پہلوان وہ ہوتا ہے جو اکھاڑے میں ہوتا ہے، ن لیگ بس میڈیا میڈیا کھیل رہی ہے، شاہد خاقان عباسی جتنی باتیں کررہے ہیں لیکن جلد ایل این جی کیس پر اچھے فیصلے آئیں گے۔

نیب کے اختیارات پر شیخ رشید احمد نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں نیب کو زیادہ سے زیادہ مضبوط ہونا چاہیے اور نیب کے دانت اور شکنجے ہونے چاہییں، مافیا مہنگے وکیل رکھ لیتا ہے تو نیب کو بھی اچھے وکیل رکھنے چاہییں۔

وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ ریلوے حادثات کی وجہ 1861کا پرانا ٹریک ہے جس پر روزآنہ 134 مسافر اور 12 فریٹ ٹرینیں چل رہی ہیں اور میں زندگی میں 8ویں بار وزیر بنا ہوں میرا مشن ایم ایل ون اور نالہ لئی منصوبہ ہے میں زندہ رہوں یا مر جاؤں لیکن ملک میں ٹرین کے لئے ایم ایل ون انقلاب لائے گا ، پیسے مل گئے تو 6 ماہ میں کراچی سرکلر ٹرین چلا دیں گے۔