نیب کو غیر موثر کرنے کیلئے وزیراعظم سے بات ہوئی تھی، نواز شریف

نیب کو غیر موثر کرنے کیلئے وزیراعظم سے بات ہوئی تھی، نواز شریف

احسن اقبال پر حملہ غیر معمولی اقدام ہے اور نوبت یہاں تک پہنچنا تشویشناک ہے، نواز شریف، ۔۔۔۔۔فوٹو/ اے پی پی

اسلام آباد: سابق وزیراعظم نے احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا احتساب کا عمل اب سب کے گرد چلے گا اور نیب کو غیر موثر کرنے کیلئے وزیراعظم سے بات ہوئی تھی مگر تذبذب کا شکار تھا۔ کہیں یہ نہ سمجھا جائے کہ میری ذات کیلئے کیا جائے اور کیس کا فیصلہ ہونے دیں پھر نیب قانون کو دیکھیں گے۔

انہوں نے مزید کہااحسن اقبال پر حملہ غیر معمولی اقدام ہے اور نوبت یہاں تک پہنچنا تشویشناک ہے جبکہ پاکستان میں یہ ماحول کیوں بن رہا ہے اسکی تہہ تک جانا چاہیئے۔

مزید پڑھیں: مسلم لیگ (ن) کے رکن آزاد کشمیر اسمبلی کے گھر سے ملازمہ کی لاش برآمد

نواز شریف کا کہنا تھا عوام کو احساس ہو چکا ہے کہ وہ مالک ہیں اب فیصلہ بھی قوم کا ہو گا اور ضمنی انتخابات میں عوامی موڈ دیکھ لیں۔

سابق وزیراعظم نے کہا حکومت پالیسی بناتی ہے اور ادارے اس پر عمل کرتے ہیں کیونکہ ضرب عضب کا اعلان میں نے خود اسمبلی میں کیا تھا کیونکہ چودھری نثار کی طبیعت ناساز تھی اور میں نے جا کر اعلان کیا تھا۔

انہوں نے کہا جیل کا ذکر روز ہوتا ہے اخبارات میں پڑھتا ہوں تاہم مملکت کا نظام ایک ضابطے اور قانون کے مطابق چلتا ہے۔

 

سابق وزیراعظم نے کہا کافی ہو چکا اب مستقبل سنوارنا چاہیے اور نیب کو ہمارے خلاف کچھ نہیں مل رہا تو ہمیں بتا دیں ہم ہی کچھ ڈھونڈ لائیں۔ سارے ثبوت ہفتوں میں آ جانے چاہیے تھے اور فیصلہ ہو جانا تھا لیکن 8 مہینے گزر گئے ہیں نیب کو ہمارے خلاف کچھ نہیں مل رہا۔

یہ بھی پڑھیں: احسن اقبال پر قاتلانہ حملے کا مقدمہ درج ،دہشتگردی کی دفعات شامل

نواز شریف نے مطالبہ کیا کہ 2013 کے انتخابات سے متعلق عمران خان کے بیان کا نوٹس لیا جانا چاہیے اور ان کی کوشش کے باوجود ن لیگ سے لوگ نہیں ٹوٹ رہے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں