'عالمی طاقتوں کے سربراہان بھارت مصالحے دار کھانا کھانے نہیں اسلحہ بیچنے جاتے ہیں'

'عالمی طاقتوں کے سربراہان بھارت مصالحے دار کھانا کھانے نہیں اسلحہ بیچنے جاتے ہیں'

بھارت کو اس کے میڈیا اور فلموں کے تناظر میں مت دیکھیں بظاہر ابھرتا ہوا رائزنگ شائننگ انڈیا درحقیقت جعلی انڈیا ہے۔۔۔۔فوٹو/ آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ

اسلام آباد: انسٹی ٹیوٹ آف اسٹریٹجک اسٹڈیزکے زیر اہتمام “ بھارت ۔ ایک ریاکارعلاقائی طاقت” کے عنوان سے منعقدہ بین الاقوامی سیمینار سے خطاب کے دوران وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ بھارت کا مکروہ چہرہ پوری دنیا کے سامنے ہے کیونکہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں اور دیگر مسائل ہر روز سامنے آ رہے ہیں لیکن عالمی برادری بھارت کی اسلحہ کی دوڑ اور بھوک سے بھی صرف نظر کر رہی ہے۔

مزید پڑھیں: نیب کو غیر موثر کرنے کیلئے وزیراعظم سے بات ہوئی تھی، نواز شریف

ان کا مزید کہنا تھا کہ عالمی طاقتوں کے سربراہان بھارت مصالحے دار کھانا کھانے نہیں بلکہ اپنا اسلحہ بیچنے جاتے ہیں کیونکہ بھارت دنیا کا سب سے بڑا اسلحے کا درآمد کنندہ ہے۔

 

وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ بھارت کو اس کے میڈیا اور فلموں کے تناظر میں مت دیکھیں بظاہر ابھرتا ہوا رائزنگ شائننگ انڈیا درحقیقت جعلی انڈیا ہے۔ جنگی جنون میں مبتلا بھارتی میڈیا حقائق مسخ کر کے پیش کر رہا ہے اور بھارت ریاستی جبر کر کے مقبوضہ کشمیر سمیت دیگر علاقوں میں اپنے حقوق کی جدوجہدوں کو دبا آ رہا ہے۔ بھارت منفی ہتھکنڈے استعمال کر کے کشمیریوں کی حق خودارادیت کی جدوجہد کو نہیں دبا سکتا۔

خرم دستگیر نے کہا کہ ڈبلیو ٹی او میں بھارت کے پاکستان سے رویے کو قریب سے دیکھ چکا ہوں اور بھارت پاکستان کے لئے اپنی مارکیٹ کبھی نہیں کھولے گا۔

یہ بھی پڑھیں: سابق آرمی چیف جنر(ر)مرزاا سلم بیگ سپریم کورٹ میں پیش ہوگئے

انہوں نے کہا بھارت پاکستان کے ساتھ آزادانہ تجارت کا حامی ہے مگر اپنی شرائط پر ہمیں اپنی معیشت کو تقویت اور سیاسی استحکام لانا ہو گا کونکہ اقتصادی استحکام کے لئے پاکستان کو ایک دہائی تک 7 فیصد کی شرح نمو درکار ہے۔

 

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں