احسن اقبال پر حملہ کرنے والے ملزم کا پہلا بیان سامنے آگیا

فائل فوٹو

لاہور: وزیر داخلہ پر حملہ کرنے والے ملزم عابد حسین نے پولیس کو دیئے گئے بیان میں انکشافات کیا ہے کہ اس کا اصل ٹارگٹ احسن اقبال ہی تھے، حملے کے لیے اپنے ہی علاقے کے ایک شخص سے 15 ہزار روپے میں پستول خریدی تھی۔

پولیس کے مطابق ملزم سے برآمد کی گئی پستول میں 9 گولیاں تھیں، حملے کے وقت ایک گولی چلاتے ہی عابد حسین کو ایلیٹ فورس کے جوانوں نے قابو کرلیا۔ ملزم کے دیئے گئے بیان کے مطابق وہ کارنر میٹنگ میں دوپہر تین بجے سے مسلح بیٹھا تھا، ملزم عابد حسین نے ایک تنظیم کے ڈھائی سو فارم فروخت کر کے پیسے جمع کئے تھے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: عمران خان آپ بزدل ترین آدمی ہو، طاقت ہے تو سامنے آو: نواز شریف
 پولیس کے مطابق ملزم نے اپنے بیان میں کہا کہ اسے خواب میں احسن اقبال کو مارنے کا حکم ملا تھاجبکہ وہ مولانا اشرف آصف جلالی اور خادم حسین رضوی کے بیانات سے متاثر ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: پاکستان کا دورہ جنوبی افریقہ، شیڈول سامنے آگیا
 واضح رہے کہ احسن اقبال پر قاتلانہ حملہ کیس کی تحقیقات میں پولیس نے منظور پورہ سے ایک اور ملزم عظیم کو گرفتار کیا ہے جو عابد حسین کے ساتھ موٹر سائیکل پر جلسہ گاہ پہنچا تھا اور واقعہ کے بعد وہ جائے وقوع سے فرار ہوگیا تھا۔