صدر مملکت نے سیشن کورٹس کو ریپ کے مقدمات سننے کا اختیار دیدیا

صدر مملکت نے سیشن کورٹس کو ریپ کے مقدمات سننے کا اختیار دیدیا
سورس:   فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے انسداد ریپ (انویسٹی گیشن اینڈ ٹرائل) آرڈیننس کے تحت سیشن کورٹس کو ریپ کے مقدمات سننے کا اختیار دیدیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق آرڈیننس کے تحت ملک بھر میں سپیشل کورٹس کے قیام تک ریپ کیسز سیشن کورٹس میں سنے جائیں گے، جمعرات کو ایوان صدر کے پریس ونگ سے جاری بیان کے مطابق صدر مملکت نے چیف جسٹس کی مشاورت سے اختیار سیشن ججز کو تفویض کیا جبکہ انہوں نے وزیراعظم پاکستان عمران خان کی ایڈوائس پر بلوچستان ہائیکورٹ اور لاہور ہائیکورٹ میں ججز تعیناتی کی سمری بھی منظور کی۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق صدر مملکت نے وزیراعظم کی ایڈوائس پر بلوچستان ہائیکورٹ کے دو ایڈیشنل ججز کی تعیناتی کیساتھ ساتھ لاہور ہائیکورٹ کے 13 ججز کی تعیناتی کی منظوری دی  اور عیدالفطر کے موقع پر قیدیوں کی سزا میں 90 دن نرمی کی منظوری بھی دی تاہم اس کا اطلاق سنگین جرائم میں ملوث قیدیوں پر نہیں ہو گا۔ 

دوسری جانب صدر مملکت نے کورونا ویکسین کی دوسری ڈوز بھی لگوا لی جن کا کہنا تھا کہ بزرگ افراد کی ویکسی نیشن بہت ضروری ہے، ماسک پہننے، ہاتھ دھونے اور چھ فٹ کے فاصلے کی احتیاط رکھیں، کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے باوجود پاکستان کی معیشت میں بہتری آئی ہے اور حکومت کاروباری اور کمزور طبقات کیلئے اقدامات کر رہی ہے۔