پاکستانی قوم کو قربانی کا بکرا نہیں بننے دیں گے : خواجہ آصف

پاکستانی قوم کو قربانی کا بکرا نہیں بننے دیں گے : خواجہ آصف

اسلام آباد : وزیر خارجہ خواجہ آصف نے کہا ہے کہ پاکستانی قوم کو قربانی کا بکرا نہیں بننے دیں گے ٗ امریکہ پاکستان کی خود مختاری کا احترام کرے۔


پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ واشنگٹن میں بیٹھے لوگوں کو پاکستان اور خطے کی حقیقی صورتحال کا ادراک نہیں، امریکا سے تعلقات ختم نہیں کر رہے لیکن معاملات ملکی مفادات کی نظر سے دیکھیں گے، پاکستان دہشت گردی کیخلاف جنگ جیتنے والا واحد ملک ہے،ہماری بقا داؤ پر لگی ہے،ہم سے بہتر یہ جنگ کوئی لڑ ہی نہیں سکتا تھا۔برکس کانفرنس کے اعلامیے میں کوئی نئی بات نہیں، ہارٹ آف ایشیا کانفرنس کا اعلامیہ بھی ایسا ہی تھا، برکس کانفرنس کے اعلامیے میں بھارت جو مزید باتیں شامل کرانا چاہتا تھا، چین نے اس کی مخالفت کی۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ سفراء کانفرنس میں امریکا کی نئی پالیسی پر غور کیا گیا ہے،امریکامیں پاکستانی سفیراعزازچوہدری نے پالیسی کے مختلف زاویوں کو واضح کیا، ٹرمپ کی افغانستان پاکستان پالیسی کے بعد خارجہ پالیسی کی فارمولیشن ضروری تھی۔ایک ماہ کے تجربے میں واضح ہواکہ پاکستان کی خارجہ پالیسی میں بحران آئے،خطے میں تبدیلی کے باعث نئی جغرافیائی تبدیلیاں آ رہی ہیں، شدت سے احساس ہے کہ ہماری قربانیوں کو دنیا دوسری نظر سے دیکھتی ہے،ہمیں دنیا کے نظریے کو تبدیل کرنا ہو گا۔