پاناما پر کمیشن نہیں چاہتے بلکہ سپریم کورٹ کا 5 رکنی بینچ ہی کرے، عمران خان

بنی گالہ: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ ہم چاہتے ہیں کہ سپریم کورٹ کا 5 رکنی بینچ خود پاناما کیس کا فیصلہ کرے کیونکہ ہم کمیشن نہیں چاہتے۔ بنی گالہ میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما عمران خان کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز چیف جسٹس نے کمیشن بنانے یا کیس چلانے کاآپشن دیا اور ہم نے کمیشن کے قیام پرفیصلے کے لیے چیف جسٹس سے وقت مانگا اور پارٹی سمیت وکلا اور لوگوں سے مشاورت اور اس نتیجے پر پہنچے کہ سپریم کورٹ کا 5 رکنی بینچ خود پاناما کیس کا فیصلہ کرے کیونکہ ہم کمیشن نہیں چاہتے اور یہی 20 کروڑ عوام کا مطالبہ ہے، بینچ کے پاس تمام معلومات آچکی ہیں لہذا روزانہ سماعت کی جائے جب کہ کمیشن صرف ایک شرط پربنے کہ وزیر اعظم مستعفٰی ہوں کیونکہ تمام ادارے حکومت کے زیر کنٹرول ہیں اور کمیشن بننےسےکچھ نہیں ہوگا۔
چئیر مین تحریک انصاف کا کہناتھا کہ برطانیہ کے وزیر اعظم کو صرف افیئر پراستعفیٰ دینا پڑا لیکن حکومت کا کام شریف فیملی کی کرپشن بچانا رہ گیا. گلف اسٹیل پر لاجواب ہونے کے بعد شریف فیملی کا کیس ختم ہوگیا اور کل کی سماعت میں ہم کیس جیت گئے تاہم نعیم بخاری کل بنچ کے سامنے جاکرہمارامؤقف پیش کریں گے اور جو عدالت کا فیصلہ ہو گا قبول کرنا ہو گا۔
عمران خان نے کہا کہ انصاف کے اداروں سے عوام کا اعتماد اٹھ چکاہے، نوازشریف نے منی ٹریل کی دستاویزات عدالت میں پیش کرنے کاکہا لیکن کل نوازشریف کے وکیل نے کہا کوئی ثبوت نہیں اور وزیراعظم نے پارلیمنٹ میں سیاسی تقریرکی لہذا نوازشریف نے عدالت سے جھوٹ کیوں بولا، وزیراعظم کے جھوٹ کے پیچھے اربوں کے اثاثے چھپے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ طیارہ حادثے میں جاں بحق ہونے والوں کے لیے دعا گو ہیں تاہم حادثات روکنے کے لیے واقعہ کی تحقیقات ہونی چاہیے۔