اسلام آباد: سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدر نے کہا ہے کہ بیت المقدس صرف جہاد سے آزاد ہوگا ۔قبلہ اول کی آزادی کے لیے مسلمانوں کا اتحاد ضروری ہے امریکہ نے مسلمانوں کی غیرت کو للکارا ہے ۔

ان خیالات کا اظہار سابق وزیراعظم نواز شریف کے داماد اور قومی اسمبلی کے ممبر کیپٹن (ر)صفدر نے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔کیپٹن (ر) صفدر نے کہا کہ نماز روزے اور زکوۃ کی طرح جہاد بھی فرض ہے.جو لوگ جہاد کی مخالفت کرتے ہیں ان کی بات درست نہیں ہے اگر جہاد فرض نہ ہوتی تو ہمارے نبی ؐ غزوہ احد،خندق کبھی نہ کرتے۔ ہم کسی ایسے مولوی کی بات نہیں مانیں گے جو جہاد کی مخالفت کرتا ہو ہم صرف اﷲ کے رسول ؐ ،قرآن و حدیث کو مانیں گے۔ امریکہ کی طرف سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارلحکومت تسلیم کرنے پر تمام مسلمانوں کو متحدہ ہونا چاہیے اور ان تمام مسائل کا حل صرف جہاد ہے۔ امریکی صدر ٹرمپ کے بیان کے بعد اسلام کے نام پر بنائے گئے عسکری اتحاد جس کی سربراہی جنرل راحیل شریف کر ر ہے ہیں اس پر بھی سوالیہ نشان ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ستر سال سے کشمیر اور فلسطین پر اقوام متحدہ کی قراردادیں نظر انداز کی جا رہی ہیں ۔امریکی صدر نے بیت المقدس کے حوالے سے بیان دے کر غیرت مسلم کو للکار ہے ۔میری جماعت کشمیر کی آزادی کی تحریک ،بوسنیا کے ساتھ کھڑی رہی ہے اور فلسطین کیساتھ بھی کھڑی رہے گی۔