فارما انڈسٹری کا ڈالر کی قیمت میں اضافے کے پیش نظر ادویات کی نرخ میں 40 فیصد اضافے کا مطالبہ

 فارما انڈسٹری کا ڈالر کی قیمت میں اضافے کے پیش نظر ادویات کی نرخ میں 40 فیصد اضافے کا مطالبہ

اسلام آباد : ادویہ ساز اداروں نے   ڈالر کے ریٹ میں روزانہ کی بنیاد پر ہونے والے  اضافے کے پیش نظر ادویات  کے نرخ  میں 40 فیصد اضافے کا مطالبہ کر دیا ۔

ایل سی بند  ہونے سے  فارما انڈسٹری کے پاس خام مال ختم ہونے سے پہلے ہی ملک بھر میں ادویات کی شدید قلت کا اندیشہ ہے ،ا ب کمپنیز  کی جانب سے ادویات کی قیمتوں  میں 40 فیصد اضافے کا مطالبہ کردیا گیا ہے ۔ 

اسٹیٹ بینک آف  پاکستان کی جانب سے ادویات کے را میٹریل کے لئے ایل سی کھولنے کے لیے مراسلہ جاری کردیا گیا ہے،سابق چئیرمین پی پی ایم اے قاضی ایم دلاور منصور کا کہنا ہے  کہ اسٹیٹ بینک نے اجازت نامہ جاری  تو کر دیا گیا   لیکن بینکوں کے پاس ڈالر ہی نہیں ہیں۔ 

دلاور منصور نے کہا کہ سری لنکا نے جب ڈیفالٹ کیا تو اس نے فارما انڈسٹری کے لئے الگ سے ڈالر مختص کر دئیے تھے،  سری لنکا کی طرز پر پاکستان میں بھی 30 سے 40 ملین ڈالر فارما انڈسٹری کے لئے مختص کیے جائیں۔ 

  ذرائع کے مطابق فارما انڈسٹری کو خام مال کے لیے ایل سی کھولنے میں دشواری کا سامنا ہے۔