سیاست چلتی رہے گی، والدین دوبارہ نہیں ملتے، مریم نواز

سیاست چلتی رہے گی، والدین دوبارہ نہیں ملتے، مریم نواز
نواز شریف کی صحت بہت خراب ہے اور ان کے پلیٹ لیٹس ادویات سے بھی بہتر نہیں ہو رہے، مریم نواز۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فوٹو/ اسکرین گریب

لاہور: مریم نواز نے کہا ہے کہ نواز شریف کو علاج کے لیے بیرون ملک جانا چاہیے، شہباز شریف نواز شریف کے علاج کے لیے تمام تیاریاں کر رہے ہیں، صحت پہلے اور سیاست بعد میں ہے۔


احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو میں سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کا کہنا تھا نواز شریف کی صحت بہت خراب ہے اور ان کے پلیٹ لیٹس ادویات سے بھی بہتر نہیں ہو رہے۔ نواز شریف کے پلیٹ لیٹس گزشتہ روز بھی گر گئے اور ان کی بیماری کی تشخیص نہیں ہو رہی۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیاست چلتی رہے گی، والدین دوبارہ نہیں ملتے اور بڑی مشکل سے آج عدالت پیش ہوئی۔

ادھر چودھری شوگر ملز کیس میں احتساب عدالت نے مریم نواز کے کزن یوسف عباس کے جوڈیشل ریمانڈ میں 22 نومبر تک توسیع کر دی۔ مریم نواز احتساب عدالت پیش ہوئیں۔ عدالت نے مریم نواز کے وکیل سے استفسار کیا مریم نواز کی ضمانتی مچلکے کہاں ہے جس پر وکیل امجد پرویز ایڈووکیٹ نے کہا ضمانتی مچلکے جمع کروا دیئے ہیں اور اصل کاپی کورٹ میں جمع ہے۔

عدالت نے نیب پراسکیوشن سے استفسار کیا چوہدری شوگر ملز کیس کا ریفرنس کب دائر کیا جائے گا جس پر سرکاری وکیل نے کہا ریفرنس جلد ہی عدالت میں دائر کر دیا جائے گا۔ عدالت نے مریم نواز سے استفسار کیا آپ ضمانت دے رہی ہیں کہ عدالت میں پیش ہونگی جس پر مریم نے کہا حکم کی تعمیل کروں گی اور آج بھی میاں صاحب کو چھوڑ کر آنا مشکل تھا کیونکہ عدالت کا احترام کرتی ہوں۔ احتساب عدالت نے چودھری شوگر ملز کیس کی سماعت 22 نومبر تک ملتوی کر دی۔