میانمار کے مسلمانوں کو بچانے کیلئے عالمی برادری کو مداخلت کرنی چاہیے، ملالہ

میانمار کے مسلمانوں کو بچانے کیلئے عالمی برادری کو مداخلت کرنی چاہیے، ملالہ

لندن: نوبیل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی نے کہا ہے کہ عالمی برادری کو میانمار کے مسلمانوں کو بچانے کے لیے مداخلت کرنی چاہیے۔ انھوں نے میانمار کی رہنما آنگ سان سو چی پر زور دیا کہ وہ روہنگیا کے لیے آواز بلند کریں۔


ملالہ نے برطانوی نشریاتی ادارے کو بتایا اب ہم خاموش نہیں رہ سکتے کیونکہ بے گھر ہونے والوں کی تعداد اب لاکھوں تک پہنچ گئی ہے۔ ملالہ یوسف زئی نے میانمار میں تشدد ختم کرنے کے لیے بین الاقوامی ردِ عمل کا مطالبہ کیا۔

ملالہ نے کہا میرے خیال سے ہم ایک سیکنڈ کے لیے بھی یہ تصور نہیں کر سکتے کہ اگر آپ کی شہریت، آپ کا ایک ملک میں رہنے کا حق مکمل طور پر رد کر دیا جائے تو کیا ہو گا۔ یہ انسانی حقوق کا مسئلہ بننا چاہیے۔ حکومتوں کو اس پر ردِ عمل دکھانا چاہیے۔ لوگ بے گھر ہو رہے ہیں انھیں تشدد کا سامنا ہے۔ بچوں کو تعلیم سے محروم کیا جا رہا ہے، انھیں بنیادی انسانی حقوق حاصل نہیں ہیں۔ ہمیں جاگ جانا چاہیے اور اس پر ردِ عمل دکھانا چاہیے اور مجھے امید ہے کہ آنگ سانگ سو چی بھی اس پر ردِ عمل دکھائیں گی۔

20 سالہ ملالہ جلد ہی یونیورسٹی آف اوکسفرڈ میں انڈرگریجویٹ بننے والی ہیں۔ گو کہ اوکسفرڈ نے کئی نوبیل انعام یافتہ شخصیات پیدا کی ہیں لیکن ملالہ کا معاملہ اس لحاظ سے منفرد ہے کہ وہ اوکسفرڈ میں داخلہ لینے سے پہلے ہی نوبیل انعام یافتہ ہیں۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں