سعودی عرب نے 23ملین کی امداد دے کر سوات کے تباہ شدہ سکول بحال کروا دیئے

سعودی عرب نے 23ملین کی امداد دے کر سوات کے تباہ شدہ سکول بحال کروا دیئے

اسلام آباد:سعودی عرب کی طرف سے سوات میں 23ملین ڈالر کے خطیر فنڈ سے آپریشن کے دوران تباہ شدہ سکول بحال کر دیئے گئے۔ سوات کے پہاڑی علاقوں میں آپریشن مکمل ہونے کے بعد طلبا تین سال کے بعد سکولوں میں نئے جذبے کے ساتھ واپس آ ئے ہیں۔


سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیومیں بچوں کے جذبات نے سب کے دل موہ لئے۔سکولوں کی بحالی کے بعد یہاں سے نقل مکانی کر کے جانے والے خاندان واپس اپنے آبائی علاقے سوات واپس پہنچے اور طلبا نے سکول جانا شروع کر دیاہے۔

سعودی فنڈ برائے ترقی کی جانب سے 23ملین ڈالر سے تباہ شدہ سکولوں کی عمارتیں بھی بحال کی گئیں اور طلباء کو مفت سکول بیگ،ٹفن باکس بھی دیئے گئے۔ سعودی ترقیاتی فنڈ کے نمائندہ عبداللہ الشعبی، وزیر تعلیم خیبر پختونخوا نے ایک سکول کا دورہ کیا اور طلبا سے ملاقات کی اور سہولیات کا جائزہ لیا۔

یونیسیف کے نمائندہ ڈیسن روہرمن نے سعودی فنڈ برائے ترقی کا23ملین ڈالر کی خطیر رقم فراہم کرنے پر شکریہ ادا کیا اور کہاکہ ان سکولوں میں بچوں کی واپسی میں سعودی حکومت نے شاندار کردار ادا کیا ہے۔

سعودی ترقیاتی فنڈ کے نمائندہ عبداللہ الشعبی نے کہا کہ ہمیںسکولوں میں دوبارہ سے تعلیمی سرگرمیاں شروع ہونے کی بہت خوشی ہے۔اپنے دورہ کے دوران وہ بتاتے ہیں کہ سوات کے اس سکول میں سعودی فرمانروا کی ہدایات کے مطابق سہولیات فراہم کی گئی ہیں۔

سعودی ترقیاتی فنڈ نے اس امید کا اظہار کیا کہ ان سہولیات کی مدد سے بچے اپنے بہتر مستقل کی طرف گامزن ہو سکیں گے اور تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کر سکیں گے۔