پی سی بی کا سٹیڈیم میں ہنگامہ آرائی کا معاملہ متعلقہ حکام کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ

پی سی بی کا سٹیڈیم میں ہنگامہ آرائی کا معاملہ متعلقہ حکام کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے گزشتہ روز افغان شائقین کی جانب سے سٹیڈیم میں کی جانے والی ہنگامہ آرائی کا معاملہ متعلقہ حکام کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) ایشیاءکپ میں گزشتہ روز پاکستان اور افغانستان کے درمیان کھیلے گئے میچ کے بعد افغان تماشائیوں نے سٹیڈیم میں ہنگامہ آرائی کی اور کرسیاں اکھاڑ کر پاکستانی شائقین کی جانب سے پھینکتے رہے جس کی ویڈیوز بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں۔ 

ایسا پہلی مرتبہ نہیں کہ دونوں ٹیموں کے درمیان میچ کے بعد ہنگامہ آرائی کا واقعہ پیش آیا ہو بلکہ پاکستان اور افغانستان کے میچز میں حالیہ برسوں کے دوران ہنگامہ آرائی کے متعدد واقعات پیش آ چکے ہیں۔ 

پاکستان کرکٹ ٹیم کا افغانستان کے خلاف ورلڈ کپ 2019ءمیں لیڈز میں ہنگامہ آرائی ہوئی، دبئی میں گزشتہ برس ٹی 20  ورلڈ کپ میں بھی افغانستان کے خلاف میچ میں ہنگامہ آرائی ہوئی تھی۔

ذرائع کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) پاکستانی مداحوں کے ساتھ پیش آنے والے واقعات سے ناخوش ہے جس کے باعث پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے سخت الفاظ میں احتجاج ریکارڈ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

پی سی بی ذرائع کا بتانا ہے کہ پہلے مرحلے میں پی سی بی خط کے ذریعے تشویش کا اظہار کرے گا اور انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی)، ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) اور شارجہ کرکٹ کونسل کو خط لکھے گا۔ 

پی سی بی ذرائع کے مطابق دوسرے مرحلے میں مختلف اجلاسوں میں معاملے کو اٹھایا جائے گا کیونکہ مداحوں کے ساتھ تین مرتبہ ناخوشگوار واقعات ہوئے جو ناقابل برداشت ہیں اور مداحوں کو غیر محفوظ نہیں بنا سکتے۔ 

پی سی بی کی جانب سے لکھے گئے خط میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ پاکستان کے میچز میں ایسے واقعات ناقابل قبول ہیں اور مستقبل میں ہونے والے میچز کے دوران مداحوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔ 

مصنف کے بارے میں