سعودی عرب کے 12 شعبوں میں غیر ملکیوں پر پابندی عائد کرنے کی تیاریاں

سعودی عرب کے 12 شعبوں میں غیر ملکیوں پر پابندی عائد کرنے کی تیاریاں

فوٹو: فائل

ریاض : یکم محرم سے سعودی عرب کے 12 شعبوں میں غیر ملکیوں پر پابندی عائد کرنے کی تیاریاں، سعودی وزارت محنت نے ریٹیل سیل سے تعلق رکھنے والے 12 شعبوں کی سعودائزیشن کے فیصلے کے نفاذ کے لئے لائحہ عمل جاری کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سعودی حکومت نے یکم محرم سے 12 شعبوں میں غیر ملکیوں پر پابندی عائد کرنے کی تیاریاں تیز کر دی ہیں۔ اس سلسلے میں سعودی وزارت محنت نے ریٹیل سیل سے تعلق رکھنے والے 12 شعبوں کی سعودائزیشن کے فیصلے کے نفاذ کے لئے لائحہ عمل جاری کردیا ہے۔سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق گاڑیاں اور سائیکلوں کی دکانوں، تیار شدہ کپڑوں کی دکانوں،بچوں کے کپڑوں کی دکانوں،مردانہ اشیا فروخت کرنے کی دکانوں ،گھریلو اور دفتری اشیا فروخت کرنے کی دکانوں میں یکم محرم سے غیر ملکی کام نہیں کرسکیں گے۔ دوسری جانب  دوسری سہ ماہی میں 3لاکھ 13ہزار غیر ملکی ملازم نجی اداروں سے فارغ کئے گئے جبکہ پہلی سہ ماہی کے دوران 199.5ہزار غیر ملکی ملازمین کو رخصت کیا گیا تھا۔

2017ء کے دوران 5لاکھ86ہزار غیر ملکیوں کو فارغ کیاگیا۔ اس طرح ڈیڑھ برس کے دوران نجی اداروںسے فارغ کئے جانے والے غیر ملکی ملازمین کی تعداد 11لاکھ تک پہنچ گئی۔جنرل کارپوریشن نے سعودی ملازمین سے متعلق اعدادوشمار دیتے ہوئے بتایا کہ سال رواں کی دوسری سہ ماہی کے اختتام پر سوشل انشورنس میں شامل سعودی ملازمین کی تعداد 1.733.560تک ا?گئی جبکہ 2017ئ کے ا?خر میں انکی تعداد 1.779.460تھی۔