مالدیپ کے سیاسی بحران پر امریکی صدر ٹرمپ اور  نریندر مودی کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ

 مالدیپ کے سیاسی بحران پر امریکی صدر ٹرمپ اور  نریندر مودی کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ

واشنگٹں: مالدیپ کے سیاسی بحران پر امریکی صدر ٹرمپ اور  نریندر مودی کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہواجس میں دونوں رہنماؤں نے وہاں کی صورتحال پر تحفظات کا اظہار کیا۔


وائٹ ہاؤس کی طرف سے جاری بیان میں یہ کہا گیا کہ امریکی صدر اور بھارتی ہم منصب کے درمیان رواں سال کا یہ پہلا ٹیلی فونک رابطہ ہے جس کے دوران  مالدیپ کے سیاسی بحران سمیت افغانستان، میانمار اور شمالی کوریا کی صورتحال پر تبادلہ خیال بھی کیا گیا۔اور جمہوریت کے احترام اور قانون کی بالادستی پر زور دیا۔

 دونوں سربراہان نے گفتگو کے دوران خطے کی خوشحالی اور سیکیورٹی کے لئے تعاون مزید بڑھانے پر بھی اتفاق کیا جب کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جنوبی ایشیا سے متعلق نئی پالیسی اور افغانستان کے استحکام کے عزم کا اعادہ کیا۔ 

مزید خیال رہے کہ مالدیپ میں سیاسی بحران نے اس وقت سر اٹھایا جب 1 فروری کو اعلیٰ عدالت نے اپنے ایک فیصلے میں گرفتار اپوزیشن رہنماؤں کی رہائی کا حکم دیا جسے حکومت نے ماننے سے انکار کردیا۔

صدر عبداللہ یامین نے پارلیمنٹ کو معطل کرتے ہوئے ملک بھر میں ایمرجنسی نافذ کی جس کے چند گھنٹے بعد چیف جسٹس عبداللہ سعید اور ایک اور جج علی حمید کو سیکیورٹی فورسز نے حراست میں لیا جس پر اپوزیشن کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا۔