معمر قذافی نے مجھے شادی کی پیشکش کی تھی,عورت کا حیران کن دعوی

معمر قذافی نے مجھے شادی کی پیشکش کی تھی,عورت کا حیران کن دعوی

دبئی: الجزائر کی رکن پارلیمنٹ اور سابق میڈیا پرسن زہیتہ بن عروس نے انکشاف کیا کہ لیبیا کے سابق سربراہ معمر قذافی نے 90ء کی دہائی میں ان کو شادی کی پیش کش کی تھی لیکن اْنہوں نے مسترد کر دی کیونکہ ایک سربراہ مملکت کی طرف سے ایسی پیشکش پر وہ ڈر گئی تھیں۔


زہیتہ نے بتایا کہ 1995 میں جب وہ الجزائر ٹیلی وڑن میں اینکر پرسن تھیں تو قذافی نے ایک وفد الجزائر بھیجا جس میں لیبیاء کی یونین ویمن کی رکن خواتین بھی شامل تھیں۔ ان خواتین کی الجزائر کے ایک سب سے بڑے ہوٹل ’ الاوراسی‘ میں زہیتہ سے ملاقات ہوئی تھی جس دوران اْنہوں نے بتایا کہ قذافی انہیں بہت زیادہ پسند کرتے ہیں اور انہوں نے رشتہ طلب کیا ہے۔

الجزائری رکن پارلیمنٹ کے مطابق وہ اس پیش کش سے بہت زیادہ ڈر گئی تھیں اور ساتھ ہی ان کو شدید حیرت بھی تھی۔ زہیتہ نے بتایا کہ انہوں نے لیبیائی خواتین کے مطالبے کے جواب کو مسترد کر دیا اور ہمیشہ جواب دینے سے دور بھاگتی رہیں، ہر مرتبہ ان کا جواب صرف ’ان شاء اللہ‘ ہوتا.. اس لیے کہ شادی کا مطالبہ کرنے والا شخص ایک ریاست کا سربراہ تھا اور اس کی بہت سی بیگمات تھیں۔

نیوویب ڈیسک< News Source