نواز شریف سے ڈاکٹر عدنان مل سکتے ہیں، لاہور ہائی کورٹ

نواز شریف سے ڈاکٹر عدنان مل سکتے ہیں، لاہور ہائی کورٹ
ڈاکٹر عدنان کو پابند کیا جائے کہ وہ ملاقات کے بعد سیاسی بیان نہ دیں، لاہور ہائیکورٹ۔۔۔۔۔۔۔فوٹو/ ریڈیو پاکستان

لاہور: لاہور ہائی کورٹ میں سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف سے ہفتے میں 2 روز ملاقات کی اجازت کے لیے درخواست کی سماعت ہوئی۔دورانِ سماعت عدالتِ عالیہ نے نواز شریف کے معالج ڈاکٹر عدنان کو سابق وزیر اعظم سے ملنے کی مشروط اجازت دے دی۔


عدالت نے محکمۂ داخلہ کے نمائندے سے سوال کیا کہ کیا آپ ڈاکٹر عدنان کو میاں نواز شریف سے ملنے کی اجازت دے سکتے ہیں۔

نمائندہ محکمۂ داخلہ نے عدالتِ عالیہ کو جواب دیا کہ جیل کے ڈاکٹر کی نگرانی میں ڈاکٹر عدنان کو ملنے کی اجازت دی جا سکتی ہے تاہم ڈاکٹر عدنان کو پابند کیا جائے کہ وہ ملاقات کے بعد سیاسی بیان نہ دیں۔

لاہور ہائی کورٹ نے ڈاکٹر عدنان کو جیل کے ڈاکٹر کی نگرانی میں نواز شریف سے ملاقات کی اجازت دے دی۔عدالت عالیہ نے ڈاکٹر عدنان کو یہ ہدایت بھی کی ہے کہ وہ نواز شریف سے ملاقات کے بعد کوئی سیاسی بیان نہیں دیں گے۔

خیال رہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف لاہور کی کوٹ لکھپت جیل میں اپنی سزا کے دن گزار رہے ہیں۔