سیاسی حریف ایک بار پھر لڑ پڑے:پارلیمنٹ کی لابی میں جاوید لطیف اور مراد سعید کے درمیان تلخ کلامی

سیاسی حریف ایک بار پھر لڑ پڑے:پارلیمنٹ کی لابی میں جاوید لطیف اور مراد سعید کے درمیان تلخ کلامی

اسلام آباد:پارلیمنٹ کی لابی میں ارکان اسمبلی ایک بار پھر آپس میں جھگڑپڑے۔ حکومتی جماعت کے اہم رہنما جاوید لطیف اور پی ٹی آئی کے ایم این اے مراد سعید کے درمیان تلخ کلامی ہوئی۔ پارلیمنٹ کی لابی میں موجود لوگوں نے دونوں کے درمیان بیچ بچائو کرایا۔ 


تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی لابی میں پی ٹی آئی کے مراد سعید اور مسلم لیگ ن کے جاوید لطیف کے درمیان جھگڑ ا ہوا،دونوں رہنماؤں میں تلخ جملوں کا تبادلہ بھی ہوا۔

ایوان کے اندر ہونے والی لڑائی باہر آ گئی

اس سے قبل قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران پی ٹی آئی کے مراد سعید کی ڈپٹی اسپیکرمرتضیٰ جاویدعباسی کے ساتھ  بھی گرما گرمی  ہوئی تھی۔بولنے کا موقع نہ ملنے پر ایوان سے نکلے تو لابی میں حکمران لیگ کے جاوید لطیف سے سامنا ہو گیا۔جاوید لطیف نے کپتان کو عقل سکھانے کا مشورہ دیا تو مراد سعید طیش میں آ گئے۔

واقعے کے بعد مراد سعید کا کہنا ہے کہ پنجاب میں پختونوں کے ساتھ زیادتی ہو رہی ہے،حکمرانوں کو آئینہ دکھایا تو وہ برا مان گئے۔ ہمارے قائد کو غدار کہتے ہیں اور مودی کو دعوت دیتے انہیں شرم نہیں آتی۔

شور اٹھا تومیاں جاوید لطیف نے خاموشی میں عافیت جانی ،مراد سعید کو معاف کرنے کا بیان دیا  اور صرف اتنا بولے کہ مراد سعید میرے بیٹوں جیسا ہے اور پارلیمنٹ سے چلے گئے۔

نیوویب ڈیسک< News Source