رواں مالی سال کے دوران ٹریکٹروں کی فروخت میں 74.20 فیصد اضافہ

رواں مالی سال کے دوران ٹریکٹروں کی فروخت میں 74.20 فیصد اضافہ

کراچی:  رواں مالی سال کے دوران ٹریکٹروں کی فروخت کی شرح میں 74.20 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے (سی پیک) اور جنرل سیلز ٹیکس کی شرح کو 16 فیصد سے 5 فیصد تک کم کرنے سے ٹریکٹر کی مقامی صنعت کی فروخت میں نمایاں اضافہ ہوا ہے۔گزشتہ مالی سال کے مقابلہ میں رواں مالی سال 2016-17ءکے پہلے 9 ماہ کے دوران ٹریکٹرز کی فروخت کی شرح میں 74 فیصد سے زائد کا اضافہ ہوا ہے۔


ٹریکٹر ساز اداروں کے اعدادوشمار کے مطابق رواں مالی سال میں جولائی تا مارچ 2016-17ءکے دوران 38 ہزار 620 ٹریکٹر فروخت کئے گئے ہیں جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران 22 ہزار 169 ٹریکٹر فروخت کئے گئے تھے اس طرح گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں جاری مالی سال کے ابتدائی 9 مہینوں کے دوران ٹریکٹروں کی فروخت میں 16 ہزار 451 یونٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق جولائی تا مارچ 2016-17ءکے دوران ملت ٹریکٹرز لمیٹڈ کی فروخت کا حجم 24 ہزار 590 یونٹس تک بڑھ گیا جبکہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران 13 ہزار 524 ٹریکٹرز فروخت کئے گئے تھے اسی طرح الغازی ٹریکٹر لیمیٹڈ کی فروخت کا حجم 7 ہزار 947 یونٹس سے 13 ہزار 926 یونٹس تک بڑھ گیا۔

شعبہ کے ماہرین نے کہا ہے کہ سی پیک کے آغاز اور سیلز ٹیکس کی شرح میں 11 فیصد کی کمی سے ٹریکٹرز کی صنعت کی فروخت میں نمایاں اضافہ ہوا ہے جس سے شعبہ کی کارکردگی پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔

نیوویب ڈیسک< News Source