کیا آپ جانتے ہیں ہچکیاں کن بیماریوں کی علامت ہے؟

لاہور: کسی انسان کو بھی ہچکیاں آجانا معمول کی بات ہے ، ہچکیاں بے ضرر ہوتی ہیں اور کچھ منٹ کے اندر ہی ختم ہوجاتی ہیں لیکن اگر آپ کو کثرت سے ہچکیوںکا سامنا ہو تو یہ سنگین طبی مسائل کی جانب اشارہ کر رہی ہوتی ہیں۔ تاہم زیادہ ہچکیاں درج ذیل بیماریوں کا عندیہ ہوسکتی ہیں۔

کیا آپ جانتے ہیں ہچکیاں کن بیماریوں کی علامت ہے؟

لاہور: کسی انسان کو بھی ہچکیاں آجانا معمول کی بات ہے ، ہچکیاں بے ضرر ہوتی ہیں اور کچھ منٹ کے اندر ہی ختم ہوجاتی ہیں لیکن اگر آپ کو کثرت سے ہچکیوںکا سامنا ہو تو یہ سنگین طبی مسائل کی جانب اشارہ کر رہی ہوتی ہیں۔ تاہم زیادہ ہچکیاں درج ذیل بیماریوں کا عندیہ ہوسکتی ہیں۔


گردوں میں خرابی :

اگر آپ گردوں کے امراض کا شکار ہیں اور آپ کو معلوم نہیں، تاہم اکثر ہچکیوں کا سامنا ہوتا ہے تو یہ اس بات کا عندیہ ہوسکتا ہے کہ آپ کے گردے خراب ہورہے ہیں۔

ایسڈ ریفلیکس امراض

ایسڈ ریفلیکس امراض کی واضح علامات میں سینے میں جلن، کھانے کا ذائقہ تلخ محسوس ہونا اور متلی وغیرہ شامل ہوتی ہیں، مگر یہ بھی حقیقت ہے کہ ہچکیاں بھی اس کی جانب اشارہ کرتی ہیں، اگر ہچکیاں ختم ہونے میں نہ آئیں اور ایسا مسلسل ہو تو آپ کو ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیئے۔

ذہنی تناو¿:

ہچکیاں اس بات کا انتباہ کر رہی ہوتی ہیں کہ آپ کو اپنے لیے کچھ وقت نکالنا چاہیئے، ایک تحقیق کے مطابق اکثر ذہنی طور پر شدید تناو? کا شکار ہونے پر ہچکیاں لگ جاتی ہیں، ایسا ہونے پر آپ کو مراقبے، ورزش یا کسی سے بات چیت کرنی چاہیئے۔

کینسر کی نشانی :

ہچکیاں کچھ اقسام کے کینسر جیسے دماغ، معدے یا لمفی نوڈز کے سرطان کی موجودگی کا عندیہ بھی ہوسکتی ہیں، اگر آپ کو مسلسل ہچکیوں کا سامنا ہو اور 48 گھنٹے سے لے کر ایک ماہ سے زیادہ تک یہ شکایت رہے تو یہ کینسر کی علامت ہوسکتی ہے، تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ کینسر کے شکار افراد میں یہ علامت بہت کم سامنے آتی ہے۔

نمونیا کا اشارہ :

ایک تحقیق کے مطابق بہت دیر تک ہچکیاں ا?نا نمونیے کی نشانی ہوسکتی ہے، اگر اس کے ساتھ سینے میں درد، ٹھنڈ محسوس ہونا، بخار اور دَم گھٹنے جیسی تکالیف بھی ہو تو یہ نمونیا ہی ہے، کیونکہ پھیپھڑوں کے انفیکشن کے باعث ہچکیاں عام معمول سے زیادہ دیر تک آتی رہتی ہیں۔

فالج :

اوہائیو اسٹیٹ یونیورسٹی کی ایک تحقیق کے مطابق ہچکیاں فالج کی ابتدائی علامت ہوسکتی ہے، اگر ہچکیوں کے ساتھ سینے میں درد ہو تو یہ خواتین میں فالج کی ابتدائی علامت ہوتی ہے، امریکا میں نیشنل اسٹروک ایسوسی ایشن نے متلی، ذہنی الجھن اور جسمانی کمزوری کے ساتھ ساتھ ہچکیوں کو بھی فالج کی ا±ن علامات میں شامل کررکھا ہے جس کا سامنا خواتین کو ہوسکتا ہے۔

ہارٹ اٹیک :

اگر ہچکیاں کئی دن تک ختم نہیں ہوتیں تو یہ ہارٹ اٹیک کا انتباہ ہوسکتی ہیں، ایک تحقیق کے مطابق ہچکیوں اور ہارٹ اٹیک کے درمیان ایک تعلق موجود ہے اور یہ اس جان لیوا دورے کی روایتی علامات جیسے پسینہ ا?نا، کمزوری یا سینے میں درد سے ہٹ کر ہے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں