نیب کی استدعا مسترد, احتساب عدالت نے خورشید شاہ  کا 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ دےدیا

 نیب کی استدعا مسترد, احتساب عدالت نے خورشید شاہ  کا 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ دےدیا
Image Source: File Photo

اسلام آباد : سکھر کی احتساب عدالت نے نیب کی خورشید شاہ کے جسمانی ریمانڈ دینے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے ان کو  14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔


 

تفصیلات کے مطابق ، پیپلز پارٹی کے رہنما خورشید شاہ کا پانچ روزہ ریمانڈ پورا ہونے پر نیب کی ٹیم نے انہیں سکھر کی احتساب عدالت میں پیش کیا، خورشید شاہ کو سکھر کے این آئی سی وی ڈی ہسپتال سے ایمبولینس کے ذریعے عدالت لایا گیا۔

 

عدالت میں پیشی کے موقع پر نیب پراسیکیوٹر نے ایک بار پھر شکوہ کیا کہ وہ تحقیقات کے حوالے سے تعاون نہیں کر رہے ہیں، نیب ان سے مزید تحقیقات کرنا چاہتی ہے، اس لیے ان کا مزید 14 روز جسمانی ریمانڈ دیا جائے کیونکہ نیب کو جو اب تک ریمانڈ ملا ہے اس میں سے آدھا وقت تو ہسپتال میں گزر گیا ہے۔

 

احتساب عدالت کے جج امیر علی مہیسر نے نیب کی مزید ریمانڈ دینے کی استدعا مسترد کر دی اور خورشید شاہ کو دوبارہ 24 نومبر کو پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

 

یادرہے کہ خورشید شاہ گذشتہ کئی روز سے دل کی تکلیف کے باعث سکھر کے این آئی سی وی ڈی ہسپتال میں داخل ہوئے تھے۔