کرتار پور راہداری کا افتتاح، امریکی محکمہ خارجہ، اقوام متحدہ اورعالمی میڈیا کا خیرمقدم

 کرتار پور راہداری کا افتتاح، امریکی محکمہ خارجہ، اقوام متحدہ اورعالمی میڈیا کا خیرمقدم
Image Source: File Photo

لاہور: جذبہ خیر سگالی کے تحت سکھ برادری کے لیے کرتار پور راہداری کھولنے کے پاکستانی فیصلے کا امریکی محکمہ خارجہ، اقوام متحدہ اورعالمی میڈیا کی جانب سے خیرمقدم کیا گیا ہے۔


 

تفصیلات کے مطابق ، امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان مورگن اورٹیگس نے کہا  کہ کرتارپور راہداری مذہبی آزادی کو فروغ دینے کی جانب بڑا قدم ہے، امریکی محکمہ خارجہ نے سکھ یاتریوں کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔

 

کرتارپور راہداری افتتاح پر اقوام متحدہ کا بھی خیرمقدم ، ترجمان اقوام متحدہ نے کہا کہ راہداری سے سکھوں کے دو مقدس مقامات کو ملا دیا گیا ہے۔ راہداری میں ویزا فری سہولت سے مذہبی ہم آہنگی کی راہ ہموار ہوگی۔

 

دوسری جانب عالمی میڈیا نے کرتارپور راہداری کھلنے پربھرپور کوریج دی، جرمن ادارے نے لکھا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان سرحد پر نئے اوپن پوائنٹ کا افتتاح ہو گیا، جس سے بھارتی سکھ بغیر ویزا کے پاکستان میں موجود اپنے مذہبی مقامات کی زیارت کرسکیں گے۔

 

برطانوی نشریاتی ادارے نے لکھا کہ سکھوں کے اہم مقدس مقام کو جانے والا راستہ بالآخر کھل گیا ہے، سکھوں کی دیرینہ خواہش کو پورا کرنے کے لیے دونوں ملکوں کے درمیان اکتوبرمیں معاہدہ ہوا تھا۔

 

روسی نیوز ایجنسی نے کہا کہ پہلی بار پاکستان میں موجود مقامات کی زیارت کا راستہ کھلنے پر سکھ برادری خوشی سے نہال ہے۔

 

الجزیرہ نے لکھا کہ بھارتی سکھوں نے پاکستان کی جانب سفر شروع کردیا ہے جو دونوں ملکوں کے درمیان ایک تاریخی معاہدے کے تحت شروع ہوا ہے۔