کراچی میں لوگ سڑکوں پر خود فیصلے کر رہے ہیں، اسی کو خانہ جنگی کہتے ہیں: شیخ رشید

کراچی میں لوگ سڑکوں پر خود فیصلے کر رہے ہیں، اسی کو خانہ جنگی کہتے ہیں: شیخ رشید

راولپنڈی: عوامی مسلم لیگ کے سربراہ اور سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ کراچی میں لوگ سٹرکوں پر خود فیصلے کر رہے ہیں اور اسی کو خانہ جنگی کہتے ہیں، 15 نومبر تک اب یا کبھی نہیں، یا آر پار ہو جائے گا۔ 

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں شیخ رشید احمد نے 12 ربیع الاول کی مبارکباد پیش کرتے ہوئے لکھا ’خاتم النبین ﷺ کی ولادت قوم کو مبارک ہو، اس سے زیادہ کیا عدم استحکام ہو گا جو آج ہے، وزیر اغواءکئے جا رہے ہیں۔ کراچی میں لوگ سڑکوں پر خود فیصلے کر رہے ہیں، اسی کو خانہ جنگی کہتے ہیں۔ بھوک افلاس اور بے روزگاری کسی کی کال کا انتظار نہیں کرے گی، 15 نومبر تک اب یا کبھی نہیں، آر پار ہو جائے گا۔‘ 

قبل ازیں آرمی چیف کی مدت ملازمت کے بیان کے حوالے سے کہنا تھا کہ تمام افواہیں دم توڑ گئی ہیں اور اب فوری انتخابات ہونے چاہئیں۔ حکومت اسلام آباد کے 25 لاکھ لوگوں کو قلعہ بند کرے گی تو لوگ اسلام آباد کے اندر اور مارگلہ کی پہاڑیوں سے نکلیں گے۔

مصنف کے بارے میں