دہشتگردی میں تعلیمی اداروں کے طلبا کے ملوث ہونے کا انکشاف

دہشتگردی میں تعلیمی اداروں کے طلبا کے ملوث ہونے کا انکشاف
اجلاس کے دوران سیف سٹی پائلٹ پروجیکٹ کے طور پر شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔۔۔۔۔فوٹو۔ اسکرین گریب

کراچی: سندھ اپیکس کمیٹی کے اجلاس میں شرکاء کو بریفنگ دی گئی اور بتایا گیا کہ دہشت گردی میں بڑے تعلیمی اداروں کے طلبا بھی ملوث ہیں۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیرصدارت ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ نادرا اور سیف سٹی پر کام کرنیوالے اداروں کو درخوارست کی گئی کہ وہ اپنا پرپوزل دیں۔


وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا سیف سٹی میں صرف کیمرا نہیں بلکہ اس میں رسپانس بہت اہم ہیں اور اسٹریٹ کرائم کے بھوت کو اب ختم کرنا ہے۔اجلاس کے دوران سیف سٹی پائلٹ پروجیکٹ کے طور پر شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ علاقائی پولیس اور دیگر سکیورٹی کے ادارے ملکر فیصلہ کریں گے۔

ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں شرکاء کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ کیمرے خارجی اور داخلی مقامات پر نصب ہوں گے۔ پولیس، ٹریفک، فائر بریگیڈ اور ہر طرح کا رسپانس ہو گا۔ اسٹریٹ کرائم کے کنٹرول کیلئے قانون میں اصلاحات کرنے جا رہے ہیں۔ کور کمانڈر کراچی نے کہا سائبر کرائم کا سسٹم ہمارا اپنا ہونا چاہیئے۔