حکومت نے 25 ہزار والے پرائز بانڈ کی فروخت پر پاپندی لگا دی

حکومت نے 25 ہزار والے پرائز بانڈ کی فروخت پر پاپندی لگا دی
کیپشن:   حکومت نے 25 ہزار والے پرائز بانڈ کی فروخت پر پاپندی لگا دی سورس:   فائل فوٹو

کراچی: پاکستان نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی ایک اور شرط کو پورا کرتے ہوئے پچیس ہزار کے پرائز بانڈز کی فروخت پر پاپندی لگا دی۔ حکومت نے 25 ہزار روپے کے غیر رجسٹرڈ انعامی بانڈز کو ختم کر کے ان کی جگہ پر 25 ہزار روپے مالیت کے نئے پریمیم رجسٹرڈ انعامی بانڈز کو متعارف کروا دیا۔

فنانس ڈویژن کی جانب سے 25 ہزار والے پرائز بانڈز کیلئے نیا ہدایت نامہ جاری کرتے ہوئے 31 مئی 2021 سے ناقابل استعمال ہونگے۔ اسٹیٹ بینک، نیشنل بینک سمیت پانچ بینکوں کی 16 برانچوں سے تبدیل کروائے جا سکتے ہیں جبکہ انعامی رقم کے حصول کے لئے پرائز بانڈز شناختی کارڈ کی کاپی کے ہمراہ اسٹیٹ بینک میں جمع کروانا ہو گا

فنانس ڈویژن کے ہدایت نامہ کے مطابق بانڈ کیش کروانے والے پر یہ لازم ہو گا کہ وہ خود ہی اس رقم کو اپنے اکاونٹ میں منتقل کرواے گا اور بانڈز کو قومی بچت سے اسپشل سیونکگز یا ڈیفنس سیونگ سرٹیفکیٹس میں تبدیل بھی کروایا جا سکتا ہے ۔ وزرات خزانہ کے حکام کا کہنا ہے کہ اس اقدام سے پاکستان کو ایف اے ٹی ایف گرے لسٹ سے نکلنے میں بھی مدد ملے گی۔ 

خیال رہے کہ اس سے قبل بھی چالیس ہزار روپے مالیت کے غیر رجسٹرڈ انعامی بانڈز کو بھی ختم کر دیا گیا ہے۔