بھارت میں انتہا پسندوں نے ایک اور کشمیری طالبعلم کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا


نئی دہلی : بھارتی ریاست ہریانہ میں ہندو انتہا پسندوں نے ایک اور کشمیر ی طالب علم کو بری طرح تشدد کا نشانہ بناڈالاجس پر ریاستی قانون ساز اسمبلی میں اراکین نے شدید شور شرابہ کے بعد بطور احتجاج واک آوٹ کیا۔


تفصیلات کے مطابق ریاست ہریانہ میں شرپسندوں کی جانب سے کشمیری طالبعلم کو زدوکوب کرنے کے معاملے پر جموں کشمیر کی قانون ساز اسمبلی میں اراکین نے شدید شور شرابہ کے بعد بطور احتجاج واک آوٹ کیا۔ہریانہ کے ضلع انبالہ میں شمالی کشمیر کے ایپل ٹاون، شوپور سے تعلق رکھنے والے طالب علم کو اس کے ساتھی طالب علموں کے گروپ نے زدوکوب کیا جس کا نوٹس لیتے ہوئے یونیورسٹی نے ایک قصور وار طالب علم کا اخراج کردیا۔