جسٹن بیبرذہنی مسائل کے بعد ایک اور بیماری کا شکار ہوگئے

جسٹن بیبرذہنی مسائل کے بعد ایک اور بیماری کا شکار ہوگئے

اوٹاوہ: کینیڈین نژاد امریکی گلوکار 24 سالہ جسٹن بیبر نے اعتراف کیا ہے کہ وہ وائرل انفیکشن کی ایک بیماری میں مبتلا ہیں جس وجہ سے نہ صرف وہ جسمانی درد بلکہ ذہنی پریشانی میں مبتلا ہیں۔


گلوکار نے وائرل بیماری کا اعتراف ایک ایسے وقت میں کیا ہے جب کہ حال ہی میں ان کا 4 سال بعد پہلا گانا ریلیز ہوا ہے اور جلد ہی ان کی زندگی پر بنائی گئی دستاویزی فلم بھی ریلیز ہونے والی ہے۔

جسٹن بیبر نے اپنی انسٹاگرام پوسٹ میں مداحوں کو بتایا کہ انہیں حال ہی میں معلوم ہوا کہ لائم کے مرض میں مبتلا ہیں جو دراصل بیکٹیریا وائرس سے لگنے والی بیماری ہے۔

لائم کا مرض دراصل حشریات کے کاٹنے کے بعد ہوتا ہے اور اس مرض میں انسان کی آنکھوں کی رنگت میں تبدیلی سمیت ان کے چہرے پر سرخ نشانات بننے لگتے ہیں جب کہ جسم کا دیگر حصہ بھی سرخ نشانات سے متاثر ہوجاتا ہے۔

گلوکار نے اپنی پوسٹ میں لکھا کہ جو لوگ کہتے ہیں کہ جسٹن بیبر پاگلوں کی طرح دکھائی دیتا ہے انہیں وہ بتانا چاہتے ہیں کہ وہ اس وقت لائم کے مرض میں مبتلا ہیں جس وجہ سے ان کے چہرے میں نمایاں تبدیلیاں آنے سمیت انہیں جسم میں درد بھی رہتا ہے۔

انہوں نے مزید لکھا کہ مرض کی وجہ سے ان کا ذہن بھی متاثر ہوا ہے ساتھ ہی انہیں دیگر صحت کے مسائل کا بھی سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ جسٹن بیبر نے خود کو ہونے والی کسی بیماری کا اعتراف کیا ہو، ماضی میں بھی وہ خود کو درپیش مسائل پر کھل کر بات کر چکے ہیں۔